افغانستان سے امریکی فوجوں کا انخلاء ، سینیٹر ساجد میر نے ایسی بات کہہ دی کہ طالبان مخالف قوتیں تلملا اٹھیں

افغانستان سے امریکی فوجوں کا انخلاء ، سینیٹر ساجد میر نے ایسی بات کہہ دی کہ ...
افغانستان سے امریکی فوجوں کا انخلاء ، سینیٹر ساجد میر نے ایسی بات کہہ دی کہ طالبان مخالف قوتیں تلملا اٹھیں

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ دو عالمی طاقتوں کو شکست دینے کا اعزاز افغانستا ن کی عوام کو جاتا ہے،افغانستان میں نائن الیون سے پہلے والا منظر نامہ بنتا دکھائی دے رہا ہے، امریکہ شکست کا داغ سجائے افغانستان سے رخصت ہورہا ہے، امریکہ نے افغانستان میں اپنے ہزاروں فوجیوں مروانے کے علاوہ ڈیڑھ کھرب ڈالر سے زیادہ کا نقصان اٹھایا۔امریکہ نے مشکل وقت میں کبھی اپنے دوستوں سے وفا نہیں کی۔

مرکزاہل حدیث راوی روڈ میں مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر پروفیسر ساجد میر  کا کہنا تھا کہ اشرف غنی کی کا اقتدار کسی بھی وقت زمین بوس ہوا چاہتاہے،دو عالمی طاقتوں روس اور امریکہ کو شکست دینے کا اعزاز افغانستا ن کے عوام کو جاتا ہے، نائن الیون کے بعد سیاسی وعسکری قیادت نے فہم و فراست کا مظاہرہ کیا ہوتا تو آج ملک ایک دوراہے پر نہ کھڑا ہوتا،پاکستان نے اس پرائی جنگ میں ستر ہزار سے زیادہ قیمتی جانیں گنوائی ہیں، اس کے علاوہ معیشت کو اربوں ڈالر کا نقصان برداشت کرنا پڑا ہے۔

 پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ اب ایک بار پھر پاکستان کو افغانستان میں باہمی کشیدگی کی صورت میں ایک خطرے کا سامنا ہے،اگر افغان طالبان کابل پر قبضہ کرلیتے ہیں تو  اس کے اثرات پاکستان پربھی مرتب ہوں گے، دہشت گردی دوبارہ زور پکڑ سکتی ہے، اس کے علاوہ لاکھوں افغان باشندوں کا پناہ کے لئے پاکستان کا رخ کرنےکااندیشہ بھی موجودہے،ہماری کمزورمعیشت مزیدکسی بوجھ کوبرداشت کرنے کی متحمل نہیں ہو سکتی، ایسی صورتحال میں پاکستان کوفغانستان میں متوقع کشیدگی کے دوران غیر جانب دار رہنا ہوگا۔