رمضان اور حفاظتی اقدامات!

رمضان اور حفاظتی اقدامات!

معاصر کی خبر کے مطابق رمضان المبارک کے دوران پنجاب بھر میں سخت ترین حفاظتی انتظامات کئے جائیں گئے اور مساجد میں نمازوں اور تراویح کے دوران نمازیوں کے تحفظ کے لئے فاضل نفری تعینات کی جائے گی۔ جدید تربیت حاصل کرنے والے کمانڈو بھی ڈیوٹی پر ہوں گے،جبکہ گشت کا بھی معقول انتظام کیا جائے گا، حکومتی ہدایت کی روشنی میں مساجد اور حساس علاقوں کی بھی درجہ بندی کی گئی اور اِسی کے حوالے سے حفاظتی انتظامات بھی ہوں گے۔یہ مسلمان ممالک کے لئے کتنی بدقسمتی کی بات ہے کہ جس دین متین کی ہدایات کی روشنی میں اللہ کی عبادت کی جاتی ہے اسی دین کے نام پر یہ نوبت آ گئی کہ انسانی جانوں کی حفاظت کے لئے پہلے سے منصوبہ بندی کرنا پڑتی ہے۔اب اسی دین متین کے نام پر شرپسندی، انتہا پسندی اور دہشت گردی کا دور دورہ ہے، مساجد کو بھی نہیں بخشا جاتا، مساجد اور امام بارگاہوں کو نمازیوں کے نماز پڑھنے کے دوران نشانہ بنایا جاتا ہے اور ایک ایسا ماحول پیدا کر دیا گیا ہے، جس کے اندر یہ دینی فریضہ بھی خوف کے عالم میں ادا کیا جاتا ہے۔یہ بھی انسانوں ہی کا کِیا دھرا ہے اور مذہب کے نام پر ہی تشدد کی کارروائیاں ہو رہی ہیں، پاک فوج نے آپریشن ضربِ عضب اور متعدد دوسرے آپریشن شروع کر رکھے ہیں، سیاسی اور عسکری قیادت کی طرف سے پختہ عزم کا اظہار کیا جاتا ہے کہ مُلک سے شدت پسندی اور دہشت گردی کو ختم کر کے دم لیا جائے گا۔اللہ تبارک تعالیٰ سے دُعا ہے کہ وہ سب کو ہدایت عطا فرمائے اور یہ مقدس اور مبارک مہینہ ہی نہیں، پورا سال امن سے گزرے اور اس مُلک میں پھر سے خوشیاں لوٹ آئیں۔ لوگ بے خوف و خطر عبادت کریں اور دوسرے امور انجام دینے کے علاوہ تفریح بھی کر سکیں۔ امین!

مزید : اداریہ