ڈاکٹر وسیم اختر نے روہنگیا مسلمانوں پر مظالم کیخلاف قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کروادی

ڈاکٹر وسیم اختر نے روہنگیا مسلمانوں پر مظالم کیخلاف قرارداد پنجاب اسمبلی ...

لاہور(پ ر)پارلیمانی لیڈرصوبائی اسمبلی وامیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اخترنے روہنگیا ( برما) کے مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کے خلاف قرارداد پنجاب اسمبلی کے سیکرٹریٹ میں جمع کروادی۔جمع کرائی جانے والی قرارداد میں کہاگیا ہے کہ ’’یہ ایوان روہنگیا ( برما) کے مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کی شدید مذمت کرتا ہے اور اس موقع پر اقوام متحدہ اور او آئی سی کی شرمناک خاموشی پر شدید احتجاج کرتا ہے نیز یہ مطالبہ بھی کرتا ہے کہ حکومت پاکستان ا ن مظلوم مسلمانوں کی داد رسی کرے اور انہیں پاکستان لانے کے ساتھ ساتھ یہاں رہنے کے لیے بھی ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کرے‘‘۔ علاوہ ازیں ڈاکٹر سیدوسیم اختر نے اس حوالے سے میڈیاکوجاری کردہ بیان میں کہاکہ برمامیں1992سے مسلح بدھ تنظیمیں کام کررہی ہیں اور اب تازہ اطلاعات کے مطابق ان تنظیموں کی تعداد 969تک پہنچ چکی ہے۔برما کی صرف5فیصد آبادی مسلمانوں پر مشتمل ہے مگر وہاں کی حکومت نے ان کے گردگھیراتنگ کردیا ہے۔2012سے اب تک ایک لاکھ چالیس ہزارروہنگیابے گھرہوچکے ہیں جبکہ اس صوبے کی ٹوٹل آبادی صرف11لاکھ ہے۔

انہوں نے مزیدکہاکہ انسانی حقوق کے منشور کی شق15کی روسے کسی بھی ملک میں رہنے والے شخص کو وہاں کی شہریت کاحق حاصل ہے۔

اور اسے اس کے حق سے محروم نہیں کیاجاسکتا۔شق14کے مطابق کسی بھی شہری کوحکومت کی جانب سے سختی کئے جانے پر دوسرے ملک میں پناہ لینے کاحق بھی حاصل ہے مگرافسوس کہ برمی مسلمانوں پر ہونے والے ظلم وزیادتی پردنیا خاموش تماشائی بنی بیٹھی ہے۔اگر یہی کچھ عیسائیوں،یہودیوں اور غیرمسلموں کے ساتھ ہوتاتواب تک بڑی طاقتیں برماپرچڑھائی کرچکی ہوتیں۔عالمی دنیااورانسانیت کے نام نہاد علمبردار ممالک کو مسلمانوں کے بارے میں اپنے دوہرے معیار بدلنے ہوں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4