بحیرہ روم کے راستے یورپ پہنچنے والے تارکین وطن کی تعداد میں دوگنا اضافہ

بحیرہ روم کے راستے یورپ پہنچنے والے تارکین وطن کی تعداد میں دوگنا اضافہ

جنیوا (اے پی پی) بحیرہ روم کے راستے کشتیوں کے ذریعے یورپ پہنچنے والے تارکین وطن کی تعداد میں تقریباً دو گنا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ جنیوا میں اقوام متحدہ کے ہائی کمیشن برائے مہاجرین کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق رواں سال کے پہلے 5 مہینوں کے دوران تقریباً 90 ہزار انسانوں نے یہ خطرناک سفر اختیار کیا۔ 2014ء کے پہلے پانچ مہینوں میں یہ تعداد 49 ہزار ریکارڈ کی گئی تھی۔ اس سال اب تک بحیرہ روم کے راستے یورپ پہنچنے کی کوشش میں تقریباً 1850 افراد موت کا شکار یا لاپتہ ہو چکے ہیں۔ اس سال سب سے زیادہ یعنی46 ہزار مہاجرین اٹلی پہنچے جبکہ 42 ہزار نے یونانی سرزمین پر قدم رکھا۔

اسپین یا پھر مالٹا پہنچنے والے پناہ کے متلاشی افراد کی تعداد نسبتاً کم رہی۔

مزید : عالمی منظر