پولیس نے ماہ مئی میں 51خطر ناک گینگز کے 132ملزموں کو گرفتار کیا

پولیس نے ماہ مئی میں 51خطر ناک گینگز کے 132ملزموں کو گرفتار کیا

لاہور(کرائم سیل) قائم مقام ڈی آئی جی انویسٹی گیشن رانا ایاز سلیم نے کہا ہے کہ انویسٹی گیشن پولیس نے ماہ مئی کے دوران شہر میں ہونے والی ڈکیتی ، راہزنی ، ہاؤس رابری ، چوری ، قتل اور دیگر سنگین وارداتوں میں ملوث51 خطرناک گینگز کے 132 ملزموں کو گرفتار کیاہے۔ گرفتار ملزموں کی نشاندہی پر پولیس نے تقریباً 2کروڑروپے مالیت کا مال مسروقہ اوربھاری مقدار میں ناجائز اسلحہ بھی برآمد کیا ہے ۔ یہ بات اُنہوں نے گزشتہ روز اپنے دفتر میں صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کے دوران بتائی ۔ اُنہوں نے بتایا کہ گرفتار ملزموں میں وہ ملزمان بھی شامل ہیں جنہوں نے کچھ عرصہ قبل شمالی چھاؤنی میں دوران واردات فہیم ارشد اور کوٹ لکھپت میں جہانگیر نامی شہری کو قتل کیا تھا۔گرفتار کیے گئے ڈکیت اور چور گروہوں میں وسیم عرف بھیا ڈکیت گینگ، شفیق اللہ گینگ، اکبر عرف اکو گینگ، رام جا گینگ، خلیل عرف خیلی ڈکیت و نوسر باز گینگ، جمیل عرف جیجو ڈکیت گینگ، عبدالغفور عرف بلا گینگ، عابد عرف بانی گینگ، یاسر عرف منشی گینگ، واجد عرف کمانڈو گینگ، طارق شاہ ڈکیت گینگ، آصف عرف کاکو مسیح، عرفان عرف فانا ، طارق عرف طاری گینگ، شہباز عرف چٹا گینگ، گلفام عرف گلو گینگ، سخاوت عرف بھائی ڈکیت گینگ، نور احمد عرف نوری ڈکیت گینگ، حماد عرف حمادا ڈکیت گینگ، عمران عرف مانی گینگ، غلام خالق بٹ چور گینگ، مقبول عرف بھول گینگ، فخر عرف فخری گینگ سمیت51گینگز شامل ہیں۔گرفتار 132ملزموں میں سے 60ملزمان انتہائی خطرناک اور سابق ریکارڈ یافتہ ہیں جن کا پیشہ ہی جرائم ہے اور یہ ملزمان جیل میں نہ صرف نئے گینگ تشکیل دیتے ہیں بلکہ جیل سے باہر آتے ہی دوبارہ منظم ہو کر وارداتیں شروع کر دیتے ہیں ۔ دوران تفتیش گرفتار ڈاکوؤں اور چوروں نے شہر میں269 سے زائد سنگین وارداتوں کا اعتراف کیا ہے جبکہ پولیس نے ملزموں کی نشاندہی پر تقریباً 2 کروڑ روپے مالیت کی نقدی ، مسروقہ کاریں،ٹرک، موٹر سائیکلیں ،آٹو رکشے، موبائل فونز، لیپ ٹاپ، طلائی زیورات اور دیگر قیمتی سامان کے علاوہ بھاری مقدار میں ناجائز آتشیں اسلحہ بھی برآمد کر لیا ہے۔ اس موقع پرقائمقام ڈی آئی جی انویسٹی گیشن نے کہا کہ جرائم پیشہ افراد کے خلاف شہر بھر میں انویسٹی گیشن کی ٹیمیں دن رات سر گرم عمل ہیں۔

مزید : علاقائی