وقت آگیا ہے محکمہ صحت کا قبلہ درست کیا جائے ، ہائی کورٹ نے اٹارنی جنرل ،ایڈووکیٹ جنرل طلب کرلئے

وقت آگیا ہے محکمہ صحت کا قبلہ درست کیا جائے ، ہائی کورٹ نے اٹارنی جنرل ...
 وقت آگیا ہے محکمہ صحت کا قبلہ درست کیا جائے ، ہائی کورٹ نے اٹارنی جنرل ،ایڈووکیٹ جنرل طلب کرلئے

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ نے قرار دیا ہے کہ اب وقت آگیا ہے کہ محکمہ صحت کو سیاست سے پاک کیا جائے تاکہ حقیقی معنوں میں بیماریوں کا تدارک کیا جاسکے ۔مسٹر جسٹس خالد محمود خان نے یہ ریمارکس پولیو اور خسرہ پرقابو پانے میں حکومت کی ناکامی کے خلاف دائردرخواستوں پر اٹارنی جنرل پاکستان اور ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو طلب کرتے ہوئے دیئے ۔عدالت میں خسرہ کیس کی سماعت شروع ہوئی تودرخواست گزار ایڈووکیٹ محمد اظہر صدیق نے پنجاب سمیت ملک بھر میں پولیو کیسز کا تفصیلی ریکارڈ پیش کرتے ہوئے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ ہر مہینہ میں لگاتار پولیو مہمات منانے کے باوجود پولیو کیسز کی رفتار میں خطرناک حد تک اضافہ ہوتا چلا آرہا ہے ۔انہوں نے محکمہ صحت کے کولڈ چین سسٹم میں موجود خامیوں کی نشاندہی کرتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ گزشتہ سال پنجاب میں سامنے آنے والے پولیو کیسز میں صرف وہ بچے پولیو کا شکار ہوئے جنہوں نے باقاعدہ پولیو سے بچاﺅ کی ویکسین کئی بار پی رکھی تھی انہوں نے مزید بتایا کہ محکمہ صحت نے ریکارڈ میں ہیر پھیر اور کرپشن کی غرض سے اپنے ملازمین کو محکمہ سے چھٹیاں دے کر عالمی ادارہ صحت میں بھی بھرتی کروا رکھا ہے تا کہ محکمہ کی مرضی کی رپورٹس مرتب کی جا سکیں عدالت کو ایسے اکثر ملازمین کا ریکارڈ بھی فراہم کیا گیا اور عالمی ادارہ صحت اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری کردہ رپورٹس کا ریکارڈ بھی دیا گیا۔عدالت نے دوران سماعت رےمارکس دیئے کہ کہ وقت آگےا ہے کہ محکمہ صحت کی سمت درست کی جائے ۔ انسانی جانوں کا معاملہ ہے عدالت خاموش نہےں رہ سکتی۔ فاضل عدالت نے اٹارنی جنرل پاکستان اور ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو معاونت کے لئے طلب کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 25جون تک ملتوی کردی ۔

مزید : لاہور