لیما سے ارجنٹائن جانے والی پرواز کے ہچکولوں سے23افراد زخمی

لیما سے ارجنٹائن جانے والی پرواز کے ہچکولوں سے23افراد زخمی
 لیما سے ارجنٹائن جانے والی پرواز کے ہچکولوں سے23افراد زخمی

  

لیما(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ روز لندن سے کوالالمپور جاتے ہوئے ملائیشیاء ایئرلائنز کا طیارہ خلیج بنگال کے اوپر اچانک ہچکولے لینے لگا جس سے 34افراد زخمی ہو گئے تھے اور طیارے کے چھت میں بھی دراڑ پڑ گئی تھی، اور اب ایسی ہی ایک اور خبر آ گئی ہے۔ اس بار ایویانکاایئرلائنز کی پیرو کے دارالحکومت لیما سے جنوبی امریکی کے ملک ارجنٹینا جانے والی پرواز حادثے کا شکار ہوئی ہے۔ برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق ایئربس اس وقت 41ہزار فٹ کی بلندی پر تھی جب اس نے شدید ہچکولے کھانے شروع کر دیئے جن سے جہاز کے اندر ہر چیز اتھل پتھل ہو گئی اور ادھر ادھر ٹکرانے سے عملے کے اراکین سمیت23افراد زخمی ہو گئے، جن میں سے اکثر کو شدید چوٹیں آئی ہیں۔ مسافروں کی طرف سے جہاز کے اندر کی تصاویر شیئر کی گئی ہیں جن میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ملائیشیاء ایئرلائنز کے طیارے کی طرح اس ایئربس میں بھی تمام سامان یہاں وہاں بکھرا ہوا ہے، کئی سیٹیں بھی ٹوٹ گئیں اور اس طیارے کی چھت میں بھی ایک دراڑ آ گئی تھی۔ عملے کی ایک خاتون رکن کو ماتھے پر اس قدر گہرا زخم آیا کہ اس کی شرٹ خون سے تربترہو گئی۔ اس رکن سمیت دو خواتین اس قدر زخمی ہوئیں کہ ڈاکٹروں کو ان کی گردن کو سہارا دینے کے لیے نیک بریس(Neck Brace)پہنانے پڑے۔ ایوی ایشن ہیرالڈ کی رپورٹ کے مطابق ایئربس نے حادثے کے باوجود سفر جاری رکھا اور یہ واقعہ پیش آنے کے 80منٹ بعد بحفاظت ارجنٹینا کے دارالحکومت بیونوس ایئریز لینڈ کر گئی۔سوشل میڈیا پر طیارے کے اندر کی تصاویر شیئر کرنے والے ایک مسافرالیجنڈروبباتو(Alejandro Babato) کا کہنا تھا کہ ’’جہاز اس قدر جھٹکے لینے لگا تھا کہ ہمیں بچنے کی امید نہ رہی تھی۔ یہ معجزہ ہی ہے جو ہم بچ گئے ہیں۔‘‘واضح رہے کہ دو دن میں یہ دوسرا طیارہ ہے جو اس طرح حادثے کا شکار ہوا ہے۔ دونوں طیاروں کو پیش آنے والے حادثات کی وجہ خراب موسم ہی بتائی گئی ہے۔

مزید : صفحہ آخر