پسند کی شادی کرنے پر زندہ جلائی گئی زینت کی ماں نے اعتراف جرم کر لیا

پسند کی شادی کرنے پر زندہ جلائی گئی زینت کی ماں نے اعتراف جرم کر لیا
پسند کی شادی کرنے پر زندہ جلائی گئی زینت کی ماں نے اعتراف جرم کر لیا

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پسند کی شادی کرنے پر بیٹی کو زندہ جلانے والی خاتون پروین بی بی نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا ہے اور کہا ہے کہ اسے اپنے کئے پر کوئی ملال نہیں ہے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق بیٹی کو زندہ جلانے والی خاتون پروین بی بی نے اعتراف جرم کر لیا ہے اور کہا ہے کہ اسے بیٹی کو زندہ جلانے پر کوئی ملال نہیں ہے۔واضح رہے کہ لاہور میں والٹن روڈ پر فیکٹری ایریا کے علاقے میں خاتون پروین بی بی نے پسند کی شادی کرنے پر اپنی بیٹی زینت کو زندہ جلا دیا۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

زینت نے 29 مئی کو حسن نامی لڑکے کیساتھ پسند کی شادی کی تھی جس کے بعد زینت کے گھر والوں نے اسے یہ کہہ کر واپس بلا لیا کہ وہ اسے باعزت طریقے سے رخصت کریں گے تاہم ایسا کرنے کے بجائے اسے زندہ جلا دیا گیا۔

مزید : لاہور