زرداری کا بھی حساب ہونا چاہئے

زرداری کا بھی حساب ہونا چاہئے
 زرداری کا بھی حساب ہونا چاہئے

  

اسلام آباد(آن لائن) وزیر مملکت برائے پانی و بجلی عابد شیر علی نے سینیٹ میں نہال ہاشمی کا استعفیٰ منظور نہ ہونے کو پی پی پی اور چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی کی سازش قرار دیا اور کہا کہ جب ایک مرتبہ فیصلہ کر دیا گیا ہے توپھر 7دنوں سے استعفیٰ قبول کیوں نہیں کیا ۔سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق نے کہا کہ یہ رولز ہیں کہ اگر کوئی بھی ممبر قومی اسمبلی یا سینیٹر استعفیٰ دیتا ہے تو سپیکر قومی اسمبلی ہو یا چیئرمین سینیٹ وہ اس ممبر سے اس کیلئے پوچھنا ہے کہ آیا اس نے استعفیٰ مرضی سے دیا ہے یا اس پر استعفیٰ کے حوالے سے دباؤ ہے، نہال ہاشمی نے کہا ہے کہ وہ دباؤ میں استعفیٰ دے رہے ہیں تو اس میں چیئرمین سینیٹ کا قصور نہیں ۔ عابد شیر علی نے چیئرمین پی پی آصف علی زرداری کو آڑے ہاتھوں لیا اور کہا ان کی بھی باہر جائیدادیں ہیں جن کا حساب ہونا چاہئے صرف نواز شریف ہی احتساب کیوں، موجودہ حکومت میں انرجی پر تاریخ ساز کام ہوا ہے اور نئی بھی منصوبے میں کرپشن نہیں ہوئی ہے، گیس پر چلنے والے جو بھی منصوبے شروع کئے ہیں اور مکمل کئے ہیں ان پر ایک روپے کی بھی کرپشن ثابت ہو جائے تو اس کا جواب دیں گے، ہماری قیادت پہ زرداری کا سایہ بھی نہ پڑے، رحمان ملک جب ڈی جی ایف آئی اے تھے تو ہماری قیادت کے خلاف غلط مقدمات بنائیمعافیاں بھی مانگیں آج ان کے کھربوں روپے کی مالیت کی جائیدادیں ہیں ان لوگوں کا دین ایمان بھی کرپشن ہے پہلے اپنی کرپشن ختم کریں اگر ہماری لیڈرشپ کیخلاف کسی نے بھی کوئی انگلی اٹھائی تو ہم اس کا منہ توڑ جواب دیں گے، ہمارے دور میں بجلی پر بے پناہ کام ہوا ہے جو کہ گزشتہ روز میں ایک میگاواٹ پر بھی کام نہیں ہوا ابھی لوگ 10 فیصد سے 100فیصد ہو گئے یہ لوگ چور ہیں کے پی کے کی حالت سب کے سامنے ہے ان کی کارکردگی صفر ہے کرپشن کا کارڈ فارکون ہے وہ جو 10فیصد سے لیکر 1000فیصد تک پہنچ گئے ہیں تمام میگا منصوبے پنجاب میں شروع ہوئے ہیں اگر کسی دوسرے صوبے میں بھی میگا منصوبے شروع کئے ہیں تو وہ وفاق کے ہیں دبئی میں اجلاس کے خرچے بھی سندھ حکومت نے برداشت کئے ہیں سندھ کے لوگوں کے جو معاشی قتل کیا گیا ہے وہ سب کے سامنے ہے۔

عابد شیر

مزید :

صفحہ اول -