افغان صدر کے غیر ذمہ دارانہ بیانات سے صورتحال مزید بگڑے گی‘ میاں مقصود احمد

افغان صدر کے غیر ذمہ دارانہ بیانات سے صورتحال مزید بگڑے گی‘ میاں مقصود احمد

  

ملتان(سٹی رپورٹر)امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدنے افغان صدر اشرف غنی کے بیان کہ’’پاکستان نے غیر اعلانیہ جنگ مسلط کررکھی ہے‘‘پرشدیدردعمل کااظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ افغان صدر کی جانب سے الزام تراشیاں قابل مذمت ہیں۔اشرف غنی امریکہ اور (بقیہ نمبر26صفحہ12پر )

بھارت کی زبان بول رہے ہیں۔انہیں یہ نہیں بھولنا چاہئے کہ پاکستان گزشتہ تین دھائیوں سے افغان مہاجرین کی مہمان نوازی کررہا ہے۔پاکستان اور افغانستان برادراسلامی ہمسایہ ممالک ہیں۔مل بیٹھ کر خدشات کو دور کرنا چاہئے۔انہوں نے کہاکہ ایک طرف اشرف غنی افغان طالبان کو دہشت گردکہتے ہیں تو دوسری جانب انہیں کابل میں اپنا دفتر کھولنے کی پیش کش کرتے ہیں۔افغان صدر کے غیر ذمہ داران بیانات سے صورتحال بہترہونے کی بجائے مزیدبگڑے گی۔کابل حکومت کو چاہئے کہ وہ اپنی سرزمین پر موجود پاکستانی سرحد کے قریب واقع ہندوستان کے درجن بھرسے زائد سفارت خانوں کو فی الفور بند کرے۔ایک طرف یہ سفارت خانے کل بھوشن نیٹ ورک کے ذریعے پاکستان میں انتشار اور افراتفری پھیلانا چاہتے ہیں جبکہ دوسری طرف اپنے ایجنٹوں کو تربیت اور مالی معاونت فراہم کرنے میں اہم کردار اداکررہے ہیں۔انڈین نیوی آفیسرکل بھوشن کی رنگے ہاتھوں گرفتاری اس بات کا کھلم کھلا ثبوت ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -