ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں بجلی کا بدترین بحران، طویل لوڈشیڈنگ ٹرپنگ سے صارفین پریشان

ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں بجلی کا بدترین بحران، طویل لوڈشیڈنگ ٹرپنگ سے ...

ملتان، ٹھٹھہ صادق آباد، لیاقت پور(سٹاف رپورٹر، نمائندگان) ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے تمام علاقوں میں بجلی کا بدترین بحران کا سلسلہ جاری ملتان سے سٹاف رپورٹر کیمطابق بجلی کے بدترین بحران نے صارفین کو شدید اذیت اور کرب میں مبتلا کردیا ہے۔ ضلعی ہیڈکوارٹرز تحصیل صدر مقامات سمیت دیہات بجلی کے بدترین بحران کا شکار ہیں۔ حکومت ، وزارت پانی وبجلی اور تقسیم کار کمپنی( میپکو) کے اعلانات صرف دعووں تک محدود ہوکررہ گئے ہیں۔ میپکو انتظامیہ کے رمضان المبارک میں شٹ ڈاؤن نہ کرنے کے اعلان کے باوجود مختلف سب ڈویژنوں میں کئی کئی گھنٹے شٹ ڈاؤن کا سلسلہ جاری ہے جس کے(بقیہ نمبر21صفحہ12پر )

باعث روزہ دار اذیت میں مبتلا ہو گئے ہیں۔ گزشتہ روز انٹر میڈیٹ کے امتحانات کے آخری روز بھی شٹ ڈاؤن سے پیپر دینے والے طلباوطالبات بجلی کی بندش سے شدید متاثر ہوئے اور گرمی سے پسینے پسینے ہو گئے اور ٹھیک طریقے سے پیپر بھی نہ دے سکے۔ اب 13جون سے انٹرمیڈیٹ کے سالانہ پریکٹیکل امتحانات شروع ہو رہے ہیں تو طلباوطالبات بجلی کی بندش کے باعث پریشان ہیں۔ دوسری جانب ملتان الیکٹرک پاور کمپنی کی جانب سے ریجن میں خراب اور جلے ہوئے ٹرانسفارمرز کی فوری تبدیلی کے اعلانات صرف دعوے ثابت ہورہے ہیں۔ رمضان المبارک میں ٹرانسفارمرز کی خرابی شہریوں، صارفین کیلئے وبال جان بنی ہوئی ہے۔ ملتان شہر میں بھی خراب ہونے اور جلنے والے ٹرانسفارمرز کی تبدیلی گھنٹوں تک نہیں ہوتی جس کی وجہ سے صارفین میں اشتعال پیدا ہوتا ہے۔ قیامت خیز گرمی اور بالخصوص رمضان المبارک میں بجلی کے استعمال میں غیر معمولی اضافہ ہونے پر ٹرانسفارمرز جلنے کی شرح میں اضافہ ہوگیا ہے۔ میپکو کی جانب سے ڈویژنل اور سب ڈویژنل دفاتر کو ایمرجنسی صورتحال سے نمٹنے کیلئے نئے ٹرانسفارمرز کے اجراء کا دعویٰ بھی درست ثابت نہیں ہوا اور پرانے طریقہ کے تحت ٹرانسفارمرز جاری کئے جارہے ہیں۔ ٹھٹھہ صادق آباد سے نمائندہ پاکستان کیمطابق ٹھٹھہ صادق آباد ونواح میں گرمی کی شدت میں اضافہ کے باوجود ماہ رمضا ن المبارک میں واپڈاسیکنڈ جہانیاں حکام کو عوام پر کوئی ترس نہ آیا ہے،واپڈاسکینڈ جہانیاں کی طرف سے علی شیر واہن،خان پور،اولڈ مخدوم رشید،حاجن شیر،پیر صادق شاہ فیڈرز سے منسلک ٹھٹھہ صادق آباد نوواح کے علاقوں میں بجلی کی گھنٹوں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ جاری ہے،گرمی میں لوڈشیڈنگ سے شہری شدید پریشان ہیں،لوڈشیڈنگ کے باعث ہسپتالوں میں مریض بھی پریشان ہے،کسانوں،تاجروں،شہریوں نے لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاج کرتے ہوئے لوڈشیڈنگ خاتمے کا مطالبہ کیا ہے لیاقت آباد سے نامہ نگار کیمطابق چکوک 31عباسیہ ،39عباسیہ اور 44عباسیہ تحصیل لیاقت پور کے درجنوں افراد نے پریس کلب لیاقت پور میں احتجاج کرتے ہوئے بجلی کے بل لہرائے اورمیپکو لیاقت پور کے خلاف شدید نعرہ بازی کی انہوں نے الزام لگایا کہ میپکو سب ڈویثرن لیاقت پور کے اہلکاروں نے اپنی کوتاہیاں چھپانے کے لیے ان چکوک کے صارفین کو نشانے پر رکھا ہوا ہے فروری کے مہینے میں ہر صارف کو 1728روپے بل بھجوایا گیا جب صارفین نے احتجاج کیا تو میپکو اہلکاروں نے خود ہی اضافی بل کاٹ دیے مگر اگلے ماہ دوبارہ لگا کر بھجوادیے گئے اس ماہ میں ہر صارف کو 948روپے کا اضافی ٹیکہ لگایا گیا ہے انہوں نے بتایا کہ بلال نامی لائن سپرنٹنڈنٹ کا کہنا ہے کہ اضافی بل فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں لیے جارہے ہیں مظاہرین میں حفیظ الرحمن ،عبدالوحید ،وریام علی ،زروق احمد ،محمد طاہر ،بلال سلیم ،نصراللہ ،فیصل فاروق ،محمد صادق ،عبدالغفار ،گرداری لعل اور دیگر شامل تھے بعد ازاں مظاہرین ایکسین میپکو ملک خورشید احمد سے ملاقات کے لیے میپکو کمپلیکس پہنچے اور وہاں بھی احتجاج کیا ایکسین نے مسلہ حل کرانے کی یقین دہانی کروائی جبکہ ایس ڈی او عارف بھٹی نے بجلی کے بل درست کر دیے اور یقین دلایا کہ آئندہ ایسی غلطی نہیں کی جائے گی ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر