نوازشریف کے کہنے پر استعفیٰ دیا نہ واپس لیا،نہال ہاشمی

نوازشریف کے کہنے پر استعفیٰ دیا نہ واپس لیا،نہال ہاشمی

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک )مسلم لیگ ن کے سینٹر نہال ہاشمی نے کہا ہے کہ نہ میاں نوازشریف کے کہنے پر استعفا دیا اور نہ واپس لیا،کچھ لوگ عجلت میں ہوتے ہیں ایسے لوگوں کو تلاش کیا جائے ، میری تقریر کو تروڑ مروڑ کر پیش کیا گیا، میری تقریر میں مخاطب جے آئی ٹی نہیں بنی گالہ والے تھے ،میں نے اپنی تقریر میں کسی کو دھمکی نہیں دی ، دیگر لوگوں نے بھی بارہا ایسی تقریریں کیں کسی کے خلاف کارروائی نہیں کی گئی۔وہ نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگوکر رہے تھے ۔انہوں نے کہا کہ میر ی پارٹی کے فورم سے ایک کمیٹی کی تشکیل دی گئی ہے جس میں 9تاریخ کو پیش ہو کر اپنا موقف پیش کر ونگا ، مجھے سوشل میڈیا پر ولن کے طور پر پیش کیا گیا انہوں نے کہا کہ میری تقریر میں مخاطب جے آئی ٹی نہیں بنی گالہ والے تھے ، میں نے عدلیہ کو ئی دھمکی نہیں دی بلکہ میں عدلیہ کا احترام کرتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ میں کل بھی مسلم لیگ میں تھا ، آج بھی ہوں اور کل بھی رہوں گا۔انہوں نے کہا کہ میاں نواز شریف کے کہنے پر استعفیٰ دیا نہ واپس لیا ،مجھے جو میرا اللہ ، پاکستان کا آئین اور عدلیہ حق دیتی ہے اسے نہ چھینا جائے،میرے ساتھ مڈل کلاس اور کراچی سے تعلق کی بنیاد پر زیادتی ہو رہی ہے اگر مجھ سے میرا آئینی حق چھین کر پھانسی لگا نی ہے تو لگا دیں مجھے قبول ہے۔ ایک سوال کے جواب میں نہال ہاشمی نے کہا کہ استعفیٰ کچھ عجلت پسند دوستوں کے مشورہ سے دیا میاں نواز شریف کے حکم عدولی کا سوچ بھی نہیں سکتا، انہوں نے مزید کہا کہ میرے استعفیٰ کے معاملہ پارٹی کا اندرونی معاملہ ہے لہذا میں پارٹی کو ہی جوابدہ ہوں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس قبل بھی ایسی تقاریر ہو چکی ہیں مگر انہیں کسی توہین عدالت کا سامنا نہیں کرنا پڑا ہے ، استعفا واپس لے کر میاں نوازشریف کی کوئی توہین نہیں کی، میاں صاحب سے متعلق باتیں کرنے والے نادان ہیں ، بہت سارے دوستوں نے مجھ پرمختلف الزامات لگائے میں کسی سے ناراض نہیں صر ف اپنے رب سے دعا کرتا ہوں اور اسی کے سامنے جھکتا ہوں۔

نہال ہاشمی/انٹرویو

مزید : کراچی صفحہ اول