سعودی عرب اور اتحادی ممالک کی طرف سے قطر کا بائیکاٹ کیے جانے کے پیچھے چھپی انتہائی حیران کن وجہ سامنے آگئی، اس تیسرے ملک کا نام سامنے آگیا کہ پوری دنیا میں نیا ہنگامہ برپاہوگیا

سعودی عرب اور اتحادی ممالک کی طرف سے قطر کا بائیکاٹ کیے جانے کے پیچھے چھپی ...
سعودی عرب اور اتحادی ممالک کی طرف سے قطر کا بائیکاٹ کیے جانے کے پیچھے چھپی انتہائی حیران کن وجہ سامنے آگئی، اس تیسرے ملک کا نام سامنے آگیا کہ پوری دنیا میں نیا ہنگامہ برپاہوگیا

  


دبئی(ڈیلی پاکستان آن لائن ) سعودی عرب سمیت دیگر ممالک کی جانب سے قطر کا سفارتی بائیکاٹ کرنے کے پیچھے چھپی وجہ سامنے آگئی ، ابتدائی تحقیقات میں اس بات کی تصدیق ہوئی ہے کہ قطر کی سرکاری نیوز ایجنسی کو ہیک کرنے کے بعد ہیکر ز نے امیر قطر کے نام سے جھوٹی اور بے بنیاد تحریر چسپاں کی جس نے سعودی عرب سمیت دیگر اتحادی ممالک کو تعلقات ختم کرنے پر اکسایا ۔

”پاکستان ٹوڈے کے مطابق “ قطری وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں کہا گیا ہے کہ ہیکرز نے سرکاری نیوز ایجنسی ہیک کرنے کے بعد امیر قطر کے نام سے آرٹیکل چسپاں کیا جس میں ایران سے محاذ آرائی سے خبردار کرنے سمیت فلسطینی گروپ حماس اور حزب اللہ کا دفاع کیا گیا تھا ۔

وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ تحقیقاتی ٹیم نے تصدیق کی ہے کہ ہیکرز نے اس عمل کیلئے اعلیٰ ٹیکنیک اور جدید طریقے استعمال کیے تاہم حکام کی جانب سے ہیکرز کی نشاندہی نہیں کی گئی ۔

امریکی اور یورپی حکام کا کہنا ہے کہ امریکی حکومتی ایجنسیاں اورماہرین اس بات پر قائل ہیں کہ قطر کی سرکاری نیوز ایجنسی اور ٹویٹر اکاﺅنٹ کو ہیک کیا گیا مگر ابھی تک انہوں نے بھی ہیکنگ کرنے والوں کا تعین نہیں کیا ۔

سی این این کی رپورٹ میں تفتیش سے آگاہ نامعلوم امریکی حکام کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیاہے کہ انہیں روسی ہیکرز پر شبہ ہے تاہم ماسکو نے رپورٹ کو بوگس قرار دیکر مسترد کر دیا ہے۔

ایک امریکی خفیہ ادارے کے افسر نے کہا کہ روس کے پاس مہارت بھی موجو د ہے اور ویسے بھی وہ امریکا کے اتحادی عرب ریاستوں کے درمیان خلیج پیدا کرنے کی کوشش کر رہا ہے لہذٰا روسی ہیکرز دوسرے ممالک اور کریمنل گروپس کو کرائے پر بھی دستیاب ہو سکتے ہیں

قطر کیساتھ تنازع رکھنے والے عرب ممالک اس پر دہشتگرد تنظیموں کی حمایت اور اپنے درینہ دشمن ایران کے ایجنڈے کو خطے میں ترویج دینے جیسے الزامات لگاتے ہیں ۔

قطری وزارت خارجہ نے امریکی فیڈرل بیورو برائے تحقیقات اور برطانوی نیشنل کرائم ایجنسی کا تحقیقات میں مدد فراہم کرنے پر شکریہ بھی ادا کیا ۔

خیال رہے دو روز قبل سعودی عرب ، یو اے ای ، بحرین ، مصر نے قطر پر دہشتگردوں کی حمایت کا الزام لگا کر سفارتی تعلقات منقطع کرنے کا اعلان کیا تھا جس کے بعد موریتانیا اور پھر اردن بھی اس اتحاد میں شامل ہو گئے ۔پاکستان پر بھی قطر سے سفارتی تعلقات ختم کرنے کے حوالے سے کافی دباﺅ تھا ۔

مزید : عرب دنیا