جے آئی ٹی کے سامنے پیشی سے قبل وزیراعظم استعفیٰ دیں ،لاہور ہائی کورٹ بار نے ایک اور قرار داد منظور کرلی

جے آئی ٹی کے سامنے پیشی سے قبل وزیراعظم استعفیٰ دیں ،لاہور ہائی کورٹ بار نے ...
جے آئی ٹی کے سامنے پیشی سے قبل وزیراعظم استعفیٰ دیں ،لاہور ہائی کورٹ بار نے ایک اور قرار داد منظور کرلی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ بار نے جے آئی ٹی کے سامنے پیشی سے قبل وزیراعظم کے استعفیٰ کے حق میں قرار داد منظور کر لی،بار نے عدلیہ مخالف بیان بازی کرنے پر نہال ہاشمی کے استعفی واپس لینے کے اقدام کوپہلے سے طے شدہ سکرپٹ قرار دے دیا۔وزیر اعظم سے استعفیٰ کے مطالبے کو دہرانے کے لئے لاہور ہائیکورٹ بار کے وکلا کے جنرل ہاوس کا مذمتی اجلاس منعقد ہوا۔اجلاس میں کثیر تعداد میں وکلاءنے شرکت کی۔

سری لنکا نے کی بھارتی باولرز کی دل کھول کر دھلائی،صرف تین وکٹوں کے نقصان پر میچ کیا اپنے نام

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے لاہور ہائیکورٹ بار کے صدر ذوالفقار چودھری نے کہا کہ حکمران جے آئی ٹی کو دباﺅ میں لانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئے ہیں جس کی شدید مذمت کرتے ہیں۔لاہور ہائی کورٹ بار کے سیکرٹری عامر سعید راں نے کہا کہ پاناما لیکس کے معاملے پروزیراعظم جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے سے قبل استعفے دیں،انہوں نے کہا کہ نہال ہاشمی نے وزیر اعظم ہا?س کے ایماءپر بیان بازی کی اسی لئے ان کا استعفیٰ واپس کرایا گیا،لاہور ہائی کورٹ بار کے نائب صدر راشد لودھی نے کہا کہ اگر وزیر اعظم نے وکلاء کے مطالبہ پر استعفیٰ نہ دیا تو رمضان کے بعد وزیر اعظم کے استعفی کے حوالے سے لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔وکلاءنے جنرل ہاﺅس کے اجلاس کے بعد کے بعد احتجاجی کیمپ میں جا کر سیاہ پٹیاں باندھیں اور وزیر اعظم کے استعفیٰ کے مطالبہ کو دہرایا۔

مزید :

لاہور -