بوئنگ کمپنی نے طیارے ایران کے حوالے کرنے سے معذرت کر لی

بوئنگ کمپنی نے طیارے ایران کے حوالے کرنے سے معذرت کر لی

واشنگٹن(آن لائن) امریکا کی طیارہ ساز کمپنی بوئنگ نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ایران کیخلاف نئی پابندیوں کے نفاذ کے بعد ایران کو طیارے دینے سے معذرت کر لی۔گزشتہ روز ترجمان بوئنگ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ہم نے ایران کو کوئی طیارہ فراہم نہیں کیا ہے۔اس وقت ہمارے پاس ایران کو طیارے بیچنے کا کوئی لائسنس بھی نہیں ،اس لیے ہم کوئی طیارہ ایران کے حوالے نہیں کریں گے۔ترجمان نے کہا کہ ہمارے پاس ایران کو طیارے مہیا کرنے کے لیے کوئی پرانا آرڈر موجود نہیں ہے۔بوئنگ نے اس سے قبل یہ کہا تھا کہ وہ ایران کے بارے میں امریکی انتظامیہ کی پالیسی کی حمایت کرے گی اور اس نے ایران کو طیارے حوالے کرنے کی تاریخ مؤخر کردی تھی تاہم اس نے طیاروں کی حوالگی سے متعلق براہ راست کچھ نہیں کہا تھا۔واضح رہے کہ بوئنگ نے دسمبر 2016ء میں ایران ائیر کے ساتھ 16 ارب 60 کروڑ ڈالرز مالیت کے ایک سمجھوتے کا اعلان کیا تھا۔اس کے تحت اس نے ایران کو 80 طیارے فروخت کرنا تھے۔بوئنگ نے اپریل 2017ء میں ایران کی آسمان ائیر لائنز کو 30بوئنگ 737 طیارے فروخت کرنے کا اعلان کیا تھا۔

تین ارب ڈالرز مالیت کے اس سودے میں اس نے مزید 30 طیاروں کی فروخت کے حقوق بھی حاصل کئے تھے۔#/s#

مزید : کامرس