بوگس دستاویزات سے نیشنل پریس ٹرسٹ کی اراضی پر قبضہ کی کوشش 3افراد کیخلاف مقدمہ درج

بوگس دستاویزات سے نیشنل پریس ٹرسٹ کی اراضی پر قبضہ کی کوشش 3افراد کیخلاف ...

ملتان ( وقائع نگار ) پولیس تھانہ بوہڑ گیٹ نے نیشنل پریس ٹرسٹ کی اراضی کے جعلی دستاویزات تیار کرکے قبضہ کرنے کی (بقیہ نمبر45صفحہ12پر )

کوشش نے 3افراد کے خلاف مقدمہ درج ۔ تفصیل کے مطابق تنویر کیانی نے پولیس تھانہ بوہڑ گیٹ کو درخواست دیتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ حکومت پاکستان کی وزارت اطلاعات ونشریات کے ذیلی ادارے نیشنل پریس ٹرسٹ کا ملکیتی رقبہ 5کنال 1مرلہ واقع عظمت واسطی روڈ ہے 25مئی 2018کو جب لینڈ ریکارڈ سنٹر ملتان سے اس پلاٹ کی تازہ ترین فرد ملکیت کے حصول کی بابت رابطہ کیا گیا تو معلوم ہوا ہے کہ محمد طارق ولد عبدالسلام نے 15فروری 2018کو مذکورہ پلاٹ کی فرد بیع جاری کروائی ہے اور اس فرد کے اجراء کیلئے پروگریسو پیپرز لمیٹڈ کا ایک جعلی لیٹر پیڈ اور تین صفحات پر مشتمل ایک سٹامپ پیپر استعمال کیا ہے جس کا ریکارڈ موجود ہے ۔ حقیقت یہ ہے کہ پروگریسو پیپرز لمیٹڈ سے اس وقت کے وزیراعظم پاکستان نے وفاقی کابینہ کی منظوری سے سال 1991میں نیشنل پریس ٹرسٹ میں ضم کردیا تھا اور اس ادارے کے تمام اثاثہ جات اور ذمہ داریاں 1991کے بعد نیشنل پریس ٹرسٹ کے پاس ہے نہ ہی اس کا علیحدہ کوئی دفتر ہے اور نہ ہی اس کا کوئی ڈائریکٹر ہے محمد طارق نے پروگریسو پیپرز کا لیٹر پیڈ اور سٹامپ پیپرز یہ کچھ لوگوں کو ڈائریکٹر دکھا کر ان کے دستخط وغیرہ سب جعلی طور پر فراڈ کی نیت سے اور پلاٹ ہتھیانے کی غرض سے تیار کئے چوکیدار نے بتلایا کہ محمد طارق اور اس کے دیگر دو ساتھیوں فیاض اور شفیق نے سرکاری پلاٹ پر قبضے کی نیت سے وہاں پچاس کے لگ بھگ سیمنٹ کے پلرز بھی پلاٹ کے سامنے ڈلوائے جوکہ یکم جون2018کا وقوعہ ہے جس پر پولیس نے مذکورہ ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر