نگران حکمران الیکشن ایکٹ کی صریحاً خلاف ورزی کے مرتکب ہورہے ہیں کیونکہ ۔ ۔ ۔انتہائی حیران کن خبرآگئی

نگران حکمران الیکشن ایکٹ کی صریحاً خلاف ورزی کے مرتکب ہورہے ہیں کیونکہ ۔ ۔ ...
نگران حکمران الیکشن ایکٹ کی صریحاً خلاف ورزی کے مرتکب ہورہے ہیں کیونکہ ۔ ۔ ۔انتہائی حیران کن خبرآگئی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(ویب ڈیسک) الیکشن کمیشن کی یاد دہانی کے باوجود نگران وزیراعظم اور وفاقی کابینہ کے اراکین کی جانب سے اب تک اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرائی گئیں، الیکشن ایکٹ 2017 کے تحت حلف اٹھانے کے 3 روز میں اثاثوں کی تفصیلات فراہم کرنا لازم ہے۔

ذرائع الیکشن کمیشن کا کہنا ہےکہ نگران وزیراعظم کو حلف اٹھائے ایک ہفتہ گزرگیا لیکن اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرائی گئیں،نگران وزیراعظم نے تاحال اثاثوں کی تفصیل جمع نہیں کرائی اور وفاقی کابینہ کے ارکان کی جانب سے بھی یہ تفصیلات اب تک نہیں دی گئی ہیں۔الیکشن کمیشن ذرائع نے مزید بتایا کہ نگران وزیراعلیٰ سندھ نےبھی تاحال اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرائیں۔

ذرائع کے مطابق الیکشن کمیشن نےاثاثوں کی تفصیلات کے لیے نگراں حکومت کے عہدیداروں کو خطوط لکھے تھے اور اس کی یاد دہانی کے لیے بھی خطوط بھیجے گئے۔

الیکشن کمیشن ذرائع کا کہنا ہے کہ اثاثوں کی تفصیلات نہ دینے پر قانوناً اراکین پارلیمنٹ کی رکنیت معطل کردی جاتی ہے۔

مزید : قومی /سیاست