ضرورت پڑنے پر حماس کے خلاف طاقت کا استعمال کیا جا سکتا ہے: اسرائیل کی ہرزہ سرائی 

ضرورت پڑنے پر حماس کے خلاف طاقت کا استعمال کیا جا سکتا ہے: اسرائیل کی ہرزہ ...
ضرورت پڑنے پر حماس کے خلاف طاقت کا استعمال کیا جا سکتا ہے: اسرائیل کی ہرزہ سرائی 

  

مقبوضہ بیت المقدس (صباح نیوز) ضرورت پڑنے پر حماس کیخلاف طاقت کا استعمال کیا جا سکتا ہے،کاغذی جہازوں سے نمٹنے کے راستے موجود ہیں عنقریب اس کا کوئی مثبت حل نکالیں گے ۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی کی مشرقی سرحد پر جمع ہونے والے فلسطینی مظاہرین کی طرف سے پھینکے گئے کاغذی جہازوں کی وجہ سے اسرائیلی ریاست سخت پریشان ہے اور اس بحران سے نکلنے کا کوئی راستہ دکھائی نہیں دے رہا ہے۔ دوسری طرف بعض اسرائیلی فوجی حکام نے کہا کہ کاغذی جہازوں سے نمٹنے کے کئی راستے موجود ہیں اور وہ عنقریب اس کا کوئی مثبت حل نکال لیں گے۔اسرائیلی فوج کی جنوبی کمانڈ کے سربراہ جنرل ایال زامیر نے کہا ہے کہ وہ عنقریب غزہ سے داغے جانے والے کاغذی جہازوں کا حل نکال لیں گے، ضرورت پڑی توغزہ میں حماس کے خلاف طاقت کا بھرپور استعمال کیاجائے گا۔

اسرائیلی فوجی عہدیدار کا یہ بیان عبرانی میڈیا نے نقل کیا جس میں کہا گیا کہ ہم نے حماس کی سرنگوں کے پروگرام کو ناکام بنا دیا۔ہم نے حماس کو درد ناک ضربیں لگائیں مگر غزہ کی پٹی کی طرف سے خطرہ ختم نہیں ہوا ۔جنرل ازامیر نے کہا کہ غزہ کے کاغذی جہازوں کی دہشت گردی کو ختم کرنے کی ذمہ داری ہماری کندھوں پر عائد ہوتی ہے، ہم اس کا جلد ہی کوئی دیر پا حل نکال لیں گے۔

مزید : بین الاقوامی