ڈی ویلیئرز کی ریٹائرمنٹ واپس لینے کی پیشکش،بورڈ کا انکار

ڈی ویلیئرز کی ریٹائرمنٹ واپس لینے کی پیشکش،بورڈ کا انکار

  



ڈربن(آئی این پی) جنوبی افریقہ کے سابق کپتان اے بی ڈی ویلیئرز نے ورلڈ کپ کے لیے ریٹائرمنٹ واپس لینے کی پیش کش کردی۔تفصیلات کے مطابق جنوبی افریقہ کے سابق کپتان اے بی ڈی ویلیئرز نے گزشتہ ماہ ورلڈ کپ کے لیے حتمی اسکواڈ کے اعلان سے پہلے بورڈ سے کہا تھا کہ وہ میگا ایونٹ کے لیے دستیاب ہیں تاہم جنوبی افریقہ کی ٹیم مینجمنٹ نے سابق کپتان کی پیش کش مسترد کردی تھی۔جنوبی افریقہ کی ٹیم مینجمنٹ کا کہنا تھا کہ یہ ممکن نہیں ہے، ڈی ویلیئرز مئی 2018کو کرکٹ سے ریٹائر ہوچکے ہیں۔ٹیم سلیکٹر لنڈا زونڈی نے کہا کہ عالمی کپ سے قبل اے بی ڈی ویلیئرز کی جانب سے ریٹائرمنٹ واپس لینے کا اعلان کپتان فاف ڈوپلیسی، ٹیم کوچ اور تمام انتظامیہ کے لیے ایک دھچکا تھا۔ان کا کہنا تھا کہ ڈی ویلیئرز کے ریٹائرمنٹ کے فیصلے نے ٹیم میں ایک خلا کو جنم دیا تھا جسے پر کرنا بہت مشکل تھا، ہم نے صرف ایک سال میں ایسے کھلاڑی تلاش کرنا تھے جو ڈی ویلیئرز کی کمی محسوس نہ ہونے دیں۔جنوبی افریقہ کے ٹیم سلیکٹر نے کہا کہ جن کھلاڑیوں نے ورلڈ کپ کے لیے بے انتہا محنت کی ہے وہ عالمی کپ کی ٹیم میں شمولیت کے حق دار ہیں۔لنڈا زونڈی کا کہنا تھا کہ ہمیں ٹیم، سلیکشن پینل اور کھلاڑیوں کے ساتھ منصفانہ رویہ قائم رکھنا تھا جس کی بنیاد پر بورڈ کی جانب سے اصولوں پر مبنی فیصلہ کیا گیا ہے۔ جنوبی افریقین کرکٹ بورڈ کو انتظامیہ کی جانب سے بتا دیا گیا تھا کہ چونکہ اے بی ڈی ویلیئرز 12 ماہ میں کوئی بین الاقوامی اور مقامی کرکٹ نہیں کھیلے اس لئے انہیں منتخب نہ کیا جائے۔

زونڈی نے کہا کہ بے شک اے بی دنیائے کرکٹ کے ایک بڑے کھلاڑی ہیں، تاہم اصول و ضوابط ہمارے لئے ان تمام باتوں سے زیادہ اہمیت رکھتے ہیں، اس لئے اس فیصلے پر ہمیں کوئی پچھتاوا نہیں۔واضح رہے کہ ورلڈ کپ 2019میں جنوبی افریقہ کی ٹیم شکست کی ہیٹ ٹرک کرچکی ہے، پروٹیز کو بنگلہ دیش، انگلینڈ اور بھارت سے ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی


loading...