تیل بحران کا خدشہ ، ریلوے حکام نے فریٹ ٹرینوں کو سپلائی روک دی

تیل بحران کا خدشہ ، ریلوے حکام نے فریٹ ٹرینوں کو سپلائی روک دی

  



لاہور( نیوز رپورٹر )پاکستان ریلوے میں ایندھن کے بحران کا خدشہ بڑھ گیا ،ریلوے کے پاس صرف ساڑھے تین دن کا ذخیرہ باقی رہنے کے بعد حکام نے فریٹ ٹرینوں کو عارضی طو رپر سپلائی دینے سے روک دیا۔ذرائع کے مطابق ریلوے کے پاس صرف ساڑھے تین دن کا ایندھن رہ گیا ہے جس کے بعد آپریشن حکام نے صرف مین لائنوں پر چلنے پسنجر ٹرینوں کو تیل کی سپلائی ینے کی ہدایت کردی ہے ۔ایندھن نہ ملنے کی وجہ سے برانچ لائنوں پر چلنے والی پسنجر ٹرینیں بھی متاثر ہونے کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے جبکہ لاہور انجن شیڈ میں 8فریٹ لوکو موٹیو انجن ایندھن نہ ملنے کی وجہ سے شیڈ میں ہی کھڑے ہیں۔ ذرائع کے مطابق ریلوے کو محمود کوٹ سے تیل کی سپلائی آتی تھی لیکن اب ریلوے نے کراچی سے براہ راست تیل لینا شروع کردیا ہے ۔جبکہ کراچی سے ایندھن کی سپلائی آنے میں تین روز لگتے ہیں لیکن ابھی تک کوئی ٹرین کراچی سے سپلائی لیکر روانہ نہیں ہوئی ۔سپلائی بروقت نہ ملنے سے لاہور ڈویژن کے فیصل آباد انجن شیڈ،ساہیوال، چنٹوٹ،وزیرآباد اوردیگر شیڈز متاثر ہوںگے ۔دوسری جانب پشاور ڈویژن نے لاہور ڈویژن کو لاہور سے ہی انجنوں میں فیولنگ مکمل کرکے بھجوانے کے لئے کہا ہے۔

مزید : علاقائی


loading...