متحدہ عرب امارات آئل ٹینکرز حملہ،کسی ریاست کے ملوث ہونے کا امکان ہے، رپورٹ سلامتی کونسل میں پیش

متحدہ عرب امارات آئل ٹینکرز حملہ،کسی ریاست کے ملوث ہونے کا امکان ہے، رپورٹ ...

  



نیو یارک(مانیٹرنگ ڈیسک)متحدہ عرب امارات کے ساحل پر چار آئل ٹینکرز پر ہونے والے حملے کی ابتدائی عالمی تحقیقاتی رپورٹ سلامتی کونسل میں پیش کردی گئی۔عرب میڈیا نے فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کے حوالے سے بتایا ہے کہ متحدہ عرب امارات کی سربراہی میں کی جانے والی ابتدائی رپورٹ میں 12مئی کو ہونیوالے حملے کے بارے میں کہا گیا ہے کہ اس میں کسی ریاست کے ملوث ہونے کا امکان ہے تاہم کسی ملک کا نام نہیں لیا گیا۔تحقیقات میں متحدہ عرب امارات کے علاوہ سعودی عرب اور ناروے شامل ہیں۔مشترکہ ابتدائی تحقیقات کے نتائج سے پتہ چلا ہے کہ سعودی عرب کے 2آئل ٹینکرز، ناروے کے ایک آئل ٹینکر اور امارات کے سامان بردار جہاز پر حملوں میں انتہائی پیچیدہ سمندری بارودی سرنگیں استعمال کی گئیں،ایسا لگتا ہے کہ ان حملوں میں کوئی ریاستی عناصر ملوث ہیں۔دوسری طرف متحدہ عرب امارات کی جانب سے دی جانے والے بریفنگ کے دوران سفارت کاروں کا کہنا تھا کہ اس ابتدائی رپورٹ میں ایران کے ممکنہ کردار کا کوئی ذکر نہیں ہے۔سعودی عرب نے صحافیوں کو بتایا کہ قوی امکان ہے کہ ایران ہی ان حملوں کا مجرم ہے۔ اقوام متحدہ میں سعودی سفیر عبداللہ ال معلمی نے بریفنگ کے بعد صحافیوں کو بتایا کہ ہمارا ماننا ہے کہ اس حملے کی ذمہ داری ایران کے کندھوں پر ہی ہے۔دوسری طرف ایران نے خود پر لگنے والے تمام الزامات کو مسترد کیا ہے۔

رپورٹ پیش

مزید : صفحہ آخر


loading...