عید ٹرو‘ مرو پردکانداروں کی لوٹ مار، سبزیاں بھی شہریوں کی پہنچ سے دور

عید ٹرو‘ مرو پردکانداروں کی لوٹ مار، سبزیاں بھی شہریوں کی پہنچ سے دور

  



وہاڑی ، کوٹ ادو (بیورو رپورٹ +سٹی رپورٹر+ تحصیل رپورٹر)شہر اور گردونواح میں عید الفطر کے تینوں ایام میں انتظامیہ کی مبینہ غفلت لاپروائی کے نتیجے میں مہنگائی کا طوفان آگیا،گوشت مرغی،سبزیوں اور دیگر اشیائخورونوش کی قیمتیں آسمان کو چھونے لگیں، مصنوعی گرانفروش مافیا سرگرم ہوگیا،ضلعی انتظامیہ اور محکمہ فوڈ حکام نے عوام کوگرانفرشوں کے رحم وکرم پر چھوڑ کر چھٹیوں پر چلے گئے۔ شہر اور گردونواح (بقیہ نمبر32صفحہ12پر )

میں میں عیدالفطر کے موقع پر مصنوعی گرانفروشوں میں مہنگا ئی کا طوفان بربا کردیا ہے،تاجر اور دکاندار منہ مانگے دام وصول کرنے لگے، گرانفروش تاجروں اور دکانداروں کے خلاف معمور ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر اسسٹنٹ کمشنراورانتظامیہ کے ذمہ دار افسران نے شہر کے اندر ماہ رمضان کے ابتدا سے آج تک صرف برائے نام چیکنگ کی جس کی وجہ سےگرانفروش دکاندار نہ ہی سرکاری نرخ نامے آویزاں کرتے ہیں اورنہ ہی سرکاری مقررہ نرخوں پر اشیاءفرو خت کرتے ہیں۔ٹماٹر جس کی قیمت بیس روپے کلو تھی عید کے موقع پر کھلے عام اسی سے سو روپے سے زائد فی کلو فروخت ہوتا رہا۔عےد،ٹرو اور مرو کے روز دوکانداروں کی لوٹ مار بڑھ گئی گوشت پھل مہنگا، ٹماٹرڈیڑھ سو روپے فی کلو تک فروخت ہوتا رہا‘پھلوں سمیت مرغی فروش بھی دونوں ہاتھوں سے لوٹتے رہے،بحث کرنے والوں سے بدتمیزی بھی کرتے رہے،تفصےل کے مطابق عےدالفطرکے تینوں روز دوکانداروں نے اپنی لوٹ مار جاری رکھی،عید کے روز قصاب بڑا گوشت5سوروپے فی کلو چھوٹا گوشت ایک ہزارروپے فی کلو تک،فارمی مرغی 4سو روپے فی کلو تک فروخت کرتے رہے اور پھل بھی دوگنے ریٹ پر فروخت ہوتے رہے جبکہ ٹماٹرڈیڑھ سوروپے فی کلو سمیت دیگر سبزےات کی قیمتیں بھی اسمان کو چھوتی رہیں، ٹماٹر پھل اور گوشت مہنگے ہونے پر غرےب اور متوسط طبقہ انتہائی پرےشان رہا اور عید کے روز بھی دال پر گزارہ کرتا رہا، شہرےوں نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کےا ہے کہ لوٹ مارکرنے والوں کے خلاف کاروائی کی جائے۔

لوٹ مار

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...