سی سی پی او لاہور سمیت کئی آر پی اوز، ڈی پی اوز کو تبدیل کرنے کا فیصلہ

سی سی پی او لاہور سمیت کئی آر پی اوز، ڈی پی اوز کو تبدیل کرنے کا فیصلہ

  

لاہور(خبر نگار) پنجاب پولیس میں بڑے پیمانے پر اکھاڑ بچھاڑ کی جارہی ہے اور فہرست کو حتمی شکل دینے کیلئے وزیر اعلی پنجاب کو بھجوا دی گی ہے۔جس میں ڈی آئی جی آپریشن لاہور رائے بابر سعید اور ڈی آئی انویسٹیگیشن لاہور ڈاکٹر انعام وحید کو عہدوں سے ہٹانے کے بعد سی سی پی او لاہور ذولفقار حمید سمیت متعدد آر پی اوز اور ڈی پی اوز تبدیل کیے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔محکمہ پولیس کے ذرائع کے مطابق سی سی پی او لاہور ذولفقار حمید کو بھی تبدیل کیا جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور ان کی جگہ غلام محمود ڈوگر کو سی سی پی او لاہور تعینات کئے جانے کا امکان ہے۔ تاہم شہزاد سلطان،جواد ڈوگر اور وسیم سیال بھی سی سی پی او لاہور کے کیلئے کوششوں میں مصروف ہیں۔اسی طرح ہمایوں بشیر تارڈ کو آر پی او گوجرانوالہ تعینات کیے جانے کا امکان ہے جبکہ جواد احمدڈوگر، غلام محمود ڈوگر، مقصود الحسن، عمران محمود کا نام آر پی او شیخوپورہ کے لیے بھی زیر غور ہیں جبکہ خانیوال، وہاڑی، بہاولنگر، مظفرگڑھ کے ڈی پی اوزکے تبادلوں کا فیصلہ بھی کیا گیاہے۔ ملتان، گوجرانوالہ، ساہیوال، سرگودھا اور فیصل آباد کے آر پی اوز بھی تبدیل کیے جانے کا قوی امکان ظاہر کیا گیا ہے۔وزیر اعلی پنجاب کو بھجوائی گئی فہرست کے مطابق ریاض نزیر گاڑھا کو آر پی او ملتان تعینات کیے جانے کا امکان ہے۔ ریجنل پولیس آفیسر شیخوپورہ شاہد جاوید کا نام آر پی او ملتان اور سرگودھا کے لیے زیر غورہے۔ رانا محمد فیصل کو آر پی او ساہیوال تعینات کیے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ سی پی او فیصل آباد کیپٹن ریٹائرڈ محمد سہیل چودھری اور سی پی او گوجرانوالہ سمیت ڈی پی اوز نارووال اور ننکانہ صاحب کے تقرر و تبادلے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ خوشاب، ٹوبہ ٹیک سنگھ، چنیوٹ، پاکپتن کے ڈی پی اوز کو بھی تبدیل کیے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔سابق ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہورڈاکٹر انعام وحید خان کو آر پی او سرگودھا تعینات کیے جانے کا امکان ہے جبکہ ڈی آئی جی پولیس پنجاب آپریشن ونگ سہیل اختر سکھیرا کو ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہور تعینات کیے جانے کا امکان ہے تاہم ان کا نام ڈی آئی جی آپریشن لاہور کیلئے بھی لیا جارہا ہے جبکہ ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب گوہر مشتاق بھٹہ کو سی پی او ملتان تعینات کیے جانے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔اسی طرح سیالکوٹ،چنیوٹ،رجیم یار خان،وہاڑی،قصور،اوکاڑہ اور پاکپتن کے ڈی پی اوز کو بھی تبدیل کیا جانے کا امکان ظاہر کیا گیا ہے تاہم اس حوالے سے وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار حتمی فیصلہ کریں گے۔اس حوالے سے ایڈیشنل آئی جی آپریشن پنجاب پولیس انعام غنی نے روزنامہ پاکستان کو بتایا کہ ناقص کارکردگی کے حامل ڈی پی اوز کو تبدیل کیا جا رہا ہے اور اس میں آر پی اوز بھی تبدیل کیے جارہے ہیں۔

اکھاڑ بچھاڑ

مزید :

صفحہ اول -