کورونا وائرس ازخودنوٹس کیس :این ڈی ایم اے سے مشینری امپورٹ کرنے کاریکارڈ اورتفصیلات طلب،ہفتہ اوراتوارکومارکیٹیں کھولنے کاحکم واپس

کورونا وائرس ازخودنوٹس کیس :این ڈی ایم اے سے مشینری امپورٹ کرنے کاریکارڈ ...
کورونا وائرس ازخودنوٹس کیس :این ڈی ایم اے سے مشینری امپورٹ کرنے کاریکارڈ اورتفصیلات طلب،ہفتہ اوراتوارکومارکیٹیں کھولنے کاحکم واپس

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)کورونا وائرس ازخودنوٹس کیس میں سپریم کورٹ نے حکومت سے ٹڈی دل کے حملوں سے نقصانات کی تفصیلات طلب کرلیں ،عدالت نے این ڈی ایم اے سے مشینری امپورٹ کرنے کاریکارڈ اورتفصیلات طلب کرلیں ،ترکی سے ٹڈی دل سپرے کیلئے جہاز لیز پر لینے کاریکارڈ بھی طلب کرلیاگیا،عدالت نے ہفتے اوراتوارکومارکیٹیں کھولنے کاحکم واپس لے لیااورکورونا ازخودنوٹس کیس کی سماعت2 ہفتے کیلئے ملتوی کردی۔

تفصیلات کے مطابق کوروناوائرس ازخودنوٹس کیس کی سپریم کورٹ میں سماعت ہوئی،چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں 4 رکنی بنچ نے سماعت کی،جسٹس مظہرعالم میاں خیل آج عدالت نہیں آسکے ۔چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ ٹڈی دل کے معاملے پر این ڈی ایم اے نے بتک کیا اقدام کئے ،جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ ٹڈی دل کے حملے فوڈ سکیورٹی کو بھی متاثر کرینگے ،ممبرلیگل این ڈی ایم اے نے کہاکہ ٹڈی دل کے سپرے کیلئے ترکی سے جہاز لیز پر لیا ہے ۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ کیا پاکستان میں سپرے کیلئے جہاز لیز پر نہیں مل سکتا ،کیاجہاز لیز پر لینے کیلئے ٹینڈر دیا گیا ،ممبرلیگل این ڈی ایم اے نے کہاکہ ترکی سے جہاز ایمرجنسی بنیادوں پر لیاگیا ہے ،چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ جوسامان منگوایا گیا اس کی دستاویزات ریکارڈ پر کیوں نہیں ،یہ نہیں کہ آپ اپنی مرضی سے جو مرضی کرتے پھریں ،ہم تمام خرایداری کاآڈٹ کرائیں گے،ہم صوبوں کابھی آڈٹ کرائیں گے ،دیکھتے ہیں کہ کورونا پر کس نے کیا کچھ کیا ہے ۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ 4ماہ سے ٹڈی دل موجود ہے 2 بار افزائش کرچکی ہے ،ٹڈی دل پر سپرے کیلئے 4 جہاز فعال نہیں ہیں ،جہاز کے پائلٹ نہیں تھے تویہ 4 جہاز کہاں سے آگئے ،ہمارے اپنے جہاز نہیں چل رہے باہر سے لا کر سپرے کیا جارہاہے۔

جسٹس اعجازالاحسن نے کہاکہ ٹڈی دل کے حملوں سے فوڈ سکیورٹی کو کتنا نقصان ہوا ،نقصان کے نتیجے میں باہر سے فوڈز منگوانے پر کتنے اخراجات آسکیں گے ،عدالت نے کہاکہ حکومت کورونا کے خاتمے کیلئے قانون سازی کے معاملے کو سنجیدگی سے دیکھے ،حکومت کورونا کے خاتمے کیلئے قانون سازی کو یقینی بنائے ،عدالت نے کہاکہ تمام حکومتیں سینیٹری ورکرز کو حفاظتی سامان کی فراہمی یقینی بنائیں،سینیٹری ورکرز کے تحفظ کے لیے قانون سازی کی جائے۔

عدالت نے حکومت سے ٹڈی دل کے حملوں سے نقصانات کی تفصیلات طلب کرلیں ،عدالت نے این ڈی ایم اے سے مشینری امپورٹ کرنے کاریکارڈ اورتفصیلات طلب کرلیں ،ترکی سے ٹڈی دل سپرے کیلئے جہاز لیز پر لینے کاریکارڈ بھی طلب کرلیاگیا،عدالت نے ہفتے اوراتوارکومارکیٹیں کھولنے کاحکم واپس لے لیااورکورونا ازخودنوٹس کیس کی سماعت2 ہفتے کیلئے ملتوی کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -اہم خبریں -