لاک ڈاﺅن کے دوران جسم پر چڑھنے والی چربی سے صرف 2 ہفتے میں نجات حاصل کرنے کا نسخہ

لاک ڈاﺅن کے دوران جسم پر چڑھنے والی چربی سے صرف 2 ہفتے میں نجات حاصل کرنے کا ...
لاک ڈاﺅن کے دوران جسم پر چڑھنے والی چربی سے صرف 2 ہفتے میں نجات حاصل کرنے کا نسخہ

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)کورونا وائرس کی وجہ سے کئی ممالک میں لاک ڈاﺅن کی گیا جہاں شہری گھروں میں قید ہو کر رہ گئے۔ باہر کی سرگرمیاں اور ورزش وغیرہ کم یا ختم ہونے اور گھر بیٹھ کر خوب کھانے پینے سے اکثر لوگ موٹاپے کا شکار ہو چکے ہیں تاہم اب ماہرین نے ایک ایسا آسان طریقہ بتا دیا ہے جس پر عمل کرتے ہوئے لاک ڈاﺅن میں جسم پر چڑھنے والی چربی صرف 14دن میں ختم کی جا سکتی ہے۔ دی مرر کے مطابق تحقیق کاروں نے درحقیقت یہ ایک ڈائٹ پلان بتایا ہے جس کا نام ’کیمبرج ویٹ پلان‘ رکھا گیا ہے۔ اس پلان کے تحت ماہرین نے لوگوں کو اپنی خوراک سے بسکٹ، کیک، برگر اور دیگر اس نوع کے تمام کھانے نکال باہر کرنے کی ہدایت کی ہے اور روزانہ 2لیٹرپانی پینے کو کہا ہے۔ ماہرین کے مطابق اس سے کم یا زیادہ پانی بہتر نہیں ہو گا۔ پورا دو لیٹر پانی پئیں۔ تازہ پھل اور سبزیاں بہت زیادہ استعمال کریں لیکن یہ خیال رہے کہ آپ کی خوراک میں پھلوں کی نسبت سبزیاں زیادہ شامل ہوں۔ مثال کے طور پر پھلوں کے ایک یا دو پورشن اور سبزیوں کے تین یا چار پورشن روزانہ۔

ماہرین کے مطابق وائٹ کاربوہائیڈریٹس کی حامل اشیاءسے بچیں، جن میں آلو بھی شامل ہیں۔ میٹھے آلو آپ کھا سکتے ہیں۔ ناشتے میں ایک انڈا، گرینر ٹوسٹ کا ایک سلائس، آدھی مگر ناشپاتی اور آدھا گریپ فروٹ استعمال کریں۔لنچ میں دو چمچ ہومس کے ساتھ ہول میل پیٹا (Pitta)، آدھی کٹی ہوئی سرخ مرچ، ایک سیب اور 10انگور استعمال کریں۔ ڈنر میں تونا مچھلی کے کباب، گریپ فروٹ سیگمنٹس ، کٹی ہوئی سرخ مرچ اور کچھ سبزیاں استعمال کریں۔ ماہرین کے مطابق مختلف دنوں میں آپ تینوں وقت کے کھانے میں اسی نوع کی مختلف اشیاءاستعمال کر سکتے ہیں۔ اس ڈائٹ پلان پر 14دن عمل کرنے سے آپ کے جسم کی فالتو چربی جاتی رہے گی۔

مزید :

تعلیم و صحت -