”بابراعظم کی بیٹنگ تکنیک میں یہ ایک خرابی ہے اور اگر وہ اس پر قابو پا لیں تو۔۔۔“ عامر سہیل نے انتہائی حیران کن بات کہہ دی

”بابراعظم کی بیٹنگ تکنیک میں یہ ایک خرابی ہے اور اگر وہ اس پر قابو پا لیں ...
”بابراعظم کی بیٹنگ تکنیک میں یہ ایک خرابی ہے اور اگر وہ اس پر قابو پا لیں تو۔۔۔“ عامر سہیل نے انتہائی حیران کن بات کہہ دی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان عامرسہیل نے بابراعظم کی بیٹنگ میں تکنیکی خامی کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے انہیں سنگلز اور ڈبلز لینے کا ہنر بھی سیکھنا ہو گا اور اگر وہ اپنی تکنیک میں موجود خامی پر قابو پا لیں تو اور بھی بہتر بلے باز بن سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ایک انٹرویو میں عامر سہیل نے کہاکہ بابر اعظم کی تکنیک میں ایک ہلکا سا جھول موجود ہے کہ وہ بولڈ یا ایل بی ڈبلیو ہونے کے خوف سے کریز پر محدود موومنٹ کرتے ہیں۔ اگر وہ اس خامی پر قابو پا لیں تو گیند کھیلنے کیلئے اچھی پوزیشن میں آ کر باﺅلرز پر حاوی اور مزید بہتر بیٹسمین ثابت ہو سکتے ہیں، مجھے امید ہے کہ ہیڈ کوچ مصباح الحق نے پہلے ہی اس مسئلے کو نوٹ کرلیا ہوگا،وہ اس پر کام کریں گے تو بابر اعظم حریف ٹیموں کیلئے پہلے سے زیادہ بڑا خطرہ ثابت ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کو بابر اعظم کے ساتھ سرفراز احمد جیسا سلوک کرنے سے گریز کرنا ہوگا، اگر نوجوان بیٹسمین کو ذمہ داری دی تو مکمل سپورٹ بھی کریں، ہر کھلاڑی پر اچھا برا وقت آتا ہے لیکن یہ درست نہیں کہ آپ اسے بے کار چیز سمجھ کر پھینک دیں،بابر اعظم کی ناکامیوں کو بھی قبول کرنا ہوگا تاکہ ان کا اعتماد منتشر نہ ہو۔

سابق کپتان نے نوجوان بیٹسمین کو مشورہ دیا کہ بیٹنگ کرتے ہوئے قیادت کا حق ادا کریں، ڈریسنگ روم کا ماحول خوشگوار اور خود کو ہر طرح کی سیاست سے دور رکھیں۔ نوجوان بیٹسمین کے 40 فیصد رنز باﺅنڈریز کے ذریعہ بنتے ہیں لیکن ہر میچ میں جارحانہ سٹروکس کھیلنے کا موقع نہیں ملتا مگر سکور بورڈ کو متحرک رکھنا ضروری ہوتا ہے، اگر نوجوان بیٹسمین سنگلز اور ڈبلز لینے کے ہنر میں بہتری لائیں تو ان سمیت ٹیم کیلئے بھی اچھا ہوگا۔

مزید :

کھیل -