بیورو کریسی ہاتھ دکھا گئی ،50ہزار ملازمین مستقل کرنے کی فہرست سے خارج

بیورو کریسی ہاتھ دکھا گئی ،50ہزار ملازمین مستقل کرنے کی فہرست سے خارج

لاہور(ج الف، جنرل رپوٹر) بےورو کرےسی اےک مرتبہ پھر کنٹرےکٹ اورورک چارج ملازمےن سے ہاتھ کرگئی ہے وزےراعلیٰ کی طرف سے منظورکرداسمری سے خودمختار اور پروجےکٹس جےسے اداروں کے گرےڈ1سے 17تک کے 50ہزارملازمےن کو مستقل کرنے کی فہرست سے نکال دےاگےا ہے،اور انہےں رےگولر ہونے کےلئے اپنے متعلقہ اداروں سے رابطہ کرنے کا کہا گےا ہے،بتاےا گےاہے کہ وزےراعلیٰ کی منظوری کی گئی سمری مےں کنٹرےکٹ اور ورک چارج ملازمےن کو مستقل کےاجاناتھا کہ ان کی تعداد ڈےڑھ لاکھ تھی اور ابتدائی سمری مےں خودمختار اداروں کے ملازمےن کے علاوہ پروجےکٹس مےں فرائض سرانجام دےنے والے کنٹرےکٹ اور ورک چارج ملازمےن کو بھی شامل کےاگےاتھا ذرائع نے بتاےا کہ محکمہ خزانہ ،محکمہ صحت اور دےگر محکموں کی افسرشاہی نے کمال چالاکی سے کام لےتے ہوئے خودمختاراداروں کے ملازمےں کے علاوہ پروجےکٹس پر کام کرنےوالے ملازمےن جن کی تعداد 50ہزار ہے انہےں مستقل ہونے کےلئے تےارکی گئی فہرست سے نکال دےاہے،اور اپنے متعلقہ اداروں سے رابطہ کرنے کا کہاکےا ہے درےں اثناءاس لئے پےرامےڈےکس سٹاف پی آئی سی کے عہدےداروں نے3مرتبہ وزےراعلیٰ سے ملاقات کی جنہوں نے عہدےدارں کو رےگولر کرنےکا وعدہ کےا،ذرائع نے بتاےا ہے کہ اب ملازمےن کو رےگولر کرنے کا وقت آےاہے، تو پی آئی سی لاہور کے7سو ملازمےن کو بورڈ کے ایمپلائزقرار دے کر فہرست سے نام ہی نکال دیئے ہےں اور انہےں بورڈ سے رابطہ کرنے کا کہاگےاہے،جس کے خلاف ملازمےن نے خودسوزی کی تحرےک چلانے کا اعلان کردےاہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1