این اے 100گوجرانوالہ دھڑنے بندی ،برادری ازم میں جکڑی سیاست شروع جٹ ،گجر،راجپوت ہار جیت میں اہم کردار ادا کرینگے

این اے 100گوجرانوالہ دھڑنے بندی ،برادری ازم میں جکڑی سیاست شروع جٹ ...
این اے 100گوجرانوالہ دھڑنے بندی ،برادری ازم میں جکڑی سیاست شروع جٹ ،گجر،راجپوت ہار جیت میں اہم کردار ادا کرینگے

  

لاہور (شہباز اکمل جندران ،معاونت ،اقبال صدےق سدھونمائندہ خصوصی) قومی اسمبلی حلقہ اےن اے 100گوجرانوالہ میں پسند ناپسند ، دھڑے بندی اور برادری عزم میں جکڑی سیاست شروع ہوگئی۔ جٹ ،گجر اور راجپوت ھارجیت میں اہم کردار ادا کرینگے ۔ یہ حلقہ تحصےل گوجر انوالہ،تحصےل وزےر آباد،ضلع حافظ آباد،ضلع شےخوپورہ اور تحصےل کامونکی کے درمےانی علاقے پر مشتمل ہے یہ ضلع گوجرانوالہ کی پسماندہ تحصےل ہے حلقہ اےن اے100مےں تحصےل نوشہر ہ ورکاں کی25،تحصےل وزےرآبادکی3اورتحصےل گوجر انوالہ کی 2ےونےن کونسلوں پرمشتمل ہے اس مےں کل رجسٹرڈووٹروں کی تعداد 2لاکھ82ہزار9سو10ہے پولنگ اسٹےشنوںکی تعداد227ہے اس مےں 2صوبائی اسمبلی پی پی101اور پی پی102کے حلقے ہےں پی پی101مےں تحصےل نوشہرہ ورکاں پندرہ ےونےن کونسلےں ہےں اس حلقہ مےں رجسٹرڈووٹروںکی تعداد1لاکھ 44ہزار 6سو15 ہے اور پولنگ اسٹےشنوںکی تعداد116ہے پی پی102 مےں تحصےل نوشہرہ ورکاں کی 10،تحصےل وزےر آبادکی 3 اورتحصےل گوجر انوالہ کی2ےونےن کونسلزہےں اس حلقہ کے رجسٹرڈ ووٹروںکی تعداد1لاکھ 38 ہزار2سو95ہے اور پولنگ اسٹےشنوں کی تعداد111ہے حلقہ مےں سٹی نوشہرہ ورکاں جس کے ووٹ 22ہزار4سو55بڑے قصبے تتلے عالی مےںووٹروںکی تعداد 10ہزار 6سو 24ہے، کڑیال کلاں مےںووٹروںکی تعداد 6ہزار 9سو 59ہے ،نوکھرمےں ووٹروںکی تعدادتقرےباً آٹھ ہزارہے باقی تقرےباً 2لاکھ 35ہزار ووٹ دےہاتی علاقے مےں ہےں اس حلقے کی بڑی برادرےاں راجپوت، جٹ،گجر اورآرائےں ہےں یہاں سے راجپوت ،جٹ اور گجر برادری کے امےد وا رہی کامےاب ہوتے ہےں آرائےں بر ادری ایک پلےٹ فارم پر متحد نہ ہونے کی وجہ سے ابھی اتک اپنا امےدوار سامنے نہےں لاسکی پسماندہ اور دےہاتی علاقہ ہونے کی وجہ سے نظرےاتی ووٹروںکی تعدادبہت کم ہے اس لےے یہاںکی سےاست برادری ازم ،دھڑہ بندی اورذاتی پسند ناپسند کے چنگل مےں پھنسی ہوئی ہے جٹ ،گجر،راجپوت برادریوں کاپےنل ہی مضبوط اور طاقتور سمجھاجاتاہے قومی اسمبلی حلقہ اےن اے 100 مےںاب تک کے امےدواروںمےں پہلے چوہدری اظہر قےوم ناہر ا سابق ٹاﺅن ناظم وسابق ٹکٹ ہولڈر مسلم لےگ (ن) ہےں یہ حاجی مدثرقےوم ناہر ا کے چھوٹے بھائی ہےںجنہوں نے 2002ءکے جنرل الیکشن مےںصوبائی اسمبلی حلقہ پی پی102سے آزاد امےدوارکی حےثےت سے الےکشن جےت کر مسلم لےگ(ق) مےںشمولےت اختےارکی اور 2008ءکے جنرل الےکشن مےں مسلم لےگ(ق) کاٹکٹ ناملنے پر آزاد امےدوارکی حےثےت سے قومی اسمبلی حلقہ اےن اے100کا الےکشن جےت کر مسلم لےگ (ن)مےںشمولےت اختےارکر لی حاجی مدثرقےوم ناہر ا نے تھانہ کچہری کی سےاست کی بجائے عوامی میل جو ل اور ترقےاتی کاموں کی بنےادرکھی اور اسی وجہ سے وہ آزاد حےثےت سے اےم پی اے اور بعد مےں اےم اےن اے بھی منتخب ہوئے ۔حلقہ اےن اے 100کے دوسرے امےدوا ر چوہدری بلال اعجاز سابق اےم اےن اے ہےں جن کاتعلق اتحاد گروپ سے ہے جنہوں نے 2002ءکے جنرل الےکشن مےں سیاسی قدآورشخصےت چوہدری حامد ناصر چٹھہ کو 25ہزار ووٹوں سے شکست دےکر حلقہ اےن اے100کی سےٹ قومی اسمبلی کی سےٹ اپنے نام کرلی انکے والدگرامی رانااعجاز احمد تےن دفعہ اور چچا رانااحمد رضا ایک دفعہ اسی حلقہ سے اےم اےن اے منتخب ہوئے 2008ءکے جنرل الےکشن مےں مسلم لےگ(ق) کی ٹکٹ پر جنرل الےکشن مےں حصہ لیا اور آزار امےدوار حاجی مدثر قےوم ناہر ا سے شکست کھاگئے چوہدری بلال اعجاز کی ہی رٹ پر لاہور ہائی کورٹ نے حاجی مدثر قےوم ناہر ا کو نااہل قرار دےا 2010 ءکے ضمنی الےکشن مےںرانابلال اعجاز نے مسلم لےگ (ن) کا ٹکٹ نہ ملنے پرالےکشن مےںحصہ نہ لیا جس کا خمےازہ انہےں شاےدآنے والے جنرل الےکشن مےں بھگتناپڑے اب پھر یہ مسلم لےگ (ن)کی ٹکٹ کے امےدوار ہےں تےسرے امےدوار حلقہ اےن اے100چوہدری تصد ق مسعود خاں اےم اےن اے ہےںجنہوںنے2010ءکے ضمنی الےکشن مےں پیپلزپا رٹی کے ٹکٹ پر الےکشن لڑ ااور کامےابی حاصل کی ان کے گھرانے کے کئی افراد بڑے بڑے سرکاری عہدوں پر فائز ہےں چوتھے امےدوار سر دا ر رےاض احمد خا ں ہےں جن کا تعلق جماعت اسلامی ہے جنہو ں نے جماعت اسلامی کو اپنی محنت اور کوششوں سے حلقہ مےں بہت منظم اور فعال کیا ہے پانچوےں امےدوار چوہدری عابد جاوےد ورک ہےں جن کاتعلق نوشہرہ ورکاں کے مضبوط ترےن سےا سی گھرانے سے ہے خود ممبر ضلع کونسل رہ چکے ہےں ان کے والد چوہدری غوث محمد ورک دودفعہ چےئرمےن ضلع کونسل ا نکے بڑے بھائی چوہدری خالد جاوےد ورک تےن دفعہ اےم پی اے اور دوسرے بھائی چوہدری خالد پرو ےز ورک دو دفعہ اےم پی اے مشےر وزےر اعلیٰ اور ایک دفعہ ممبر ضلع کونسل رہ چکے ہےں 2010ءکے اےن اے 100کے ضمنی الےکشن مےں چوہدری تصدق مسعود خا ں کی کامےابی مےں ا ن کا اہم کردار ہے اےن اے100مےں ابھی تک تحرےک انصاف کاکوئی بھی امےدوار سامنے نہےں آےا صوبائی اسمبلی پی پی101موجودہ اےم پی اے چوہدری خالد پروےز ورک 2008ءکے جنر ل الےکشن مےں مسلم لےگ (ق) کی ٹکٹ پر ایم پی اے منتخب ہوئے اورےونیفکےشن مےں شامل ہو گئے جس کا بھر پور فائدہ اٹھاتے ہوئے حلقے مےں تر قےاتی کاموں کا جال بچھا دےاان کا تعلق ا تحاد گروپ سے ہے دوسرے امےدوار حلقہ پی پی101چوہدری سےف اللہ ورک سابق اےم پی اے چوہدری امانت ورک مرحوم کے بھائی ہےں ناہر اگر وپ سے تعلق ہے اور مسلم لےگ(ن) کی ٹکٹ کے امےدوار ہےں تےسرے امےدوار چوہدری امتےاز احمد ورک سابق ناظم ےونےن کونسل ار تالی ورکاں ایک بڑے زمےندار گھرانے سے تعلق رکھتے ہےں یہ جماعت الدعوہ کے سر گرم کا رکن ہےں چوتھے امےدوار چوہدری عابد سہیل ورک حلقہ پی پی 101مےں تحرےک انصاف کے امےدوار ہےں حلقے مےں بھرپور سر گرم ہےں علاقہ مےں تحرےک انصا ف انہی کے دم سے ہے پانچوےں امےدوار مےاں مظہر اقبال ساجد جماعت اسلامی کی طرف سے امےدوار ہےںسابق نائب ناظم سٹی نوشہرہ ورکاں رہ چکے ہےں صوبائی حلقہ پی پی 102مےں موجود ہ اےم پی اے چوہدری عرفان بشےر گوجر 2008ءکے جنرل الےکشن مےں مسلم لےگ (ق) کی ٹکٹ پر اےم پی اے منتخب ہوئے اور ےونےفکےشن بلاک مےں چلے گئے اب مسلم لےگ(ن) کی طرف سے الےکشن مےں حصہ لےنے کے خواہاں ہےں دوسرے امےدوار حلقہ پی پی 102چوہدری رفاقت حسےن گجر اےڈووکےٹ ہےں جنہوں نے 2008ء کا الےکشن آزاد امےدوار کی حےثےت سے ناہر ا گر وپ کی طرف سے لڑا اور صرف 243 ووٹوںسے ہا ر گئے اب مسلم لےگ(ن) کی ٹکٹ کے امےدوار ہےں تےسرے امےدوار چوہدری تنوےر اعظم چیمہ ہےں جن کے والد چوہدری محمد اعظم چیمہ تےن دفعہ اےم پی اے منتخب ہوئے یہ مسلم لےگ (ق)اورپیپلزپا رٹی کے حلقہ 102کے متفقہ نامزد امےدوار ہےں چوتھے امےدوار چوہدری سردار طارق رضا گجر سابق ٹاﺅن ناظم ہےں جن کا تعلق پیپلزپارٹی سے ہے پانچوےں امےدوار چوہدری محمد سرور وڑائچ جماعت اسلامی کے نامز د کر دہ امےدوار ہےں تحصےل نوشہرہ ورکاں مےں دوبڑے سےاسی گرو پ ناہر ا گر وپ اور اتحاد گرو پ ہےں ناہر ا گرو پ کے قائد حاجی مدثرقےوم ناہر ا سابق اےم اےن اے ہےں ناہر ا گرو پ کی طر ف سے حلقہ اےن اے 100مےں اےم اےن اے کے امےدوار چوہدری اظہر قےو م ناہر ا صوبائی اسمبلی حلقہ 101چوہدری سےف اللہ ورک ،صوبائی اسمبلی حلقہ پی پی102مےں چوہدری رفاقت حسےن گوجر امےدوار ہےں اور اتحادگروپ کی طرف سے اےم اےن اے کے امےدوار رانابلال اعجاز ، پی پی101مےں چوہدری خالد پروےز ورک اےم پی اے اور پی پی102مےں چوہدری عرفان بشےر گوجر اےم پی اے ہےں دونوں ہی گروپ مسلم لےگ(ن) کی ٹکٹ کے امےدوار ہےں مگر یہاں دلچسپ صو رتحال یہ ہے کہ دونوںگروپوں مےں کوئی بھی گرو پ اپنے پےنل کے ایک بھی امےدوار کے بغےر الےکشن لڑنے کو تےار نہےں جبکہ مسلم لےگ (ن) قومی اسمبلی حلقہ اےن اے 100 مےں مسلم لےگ (ن) کے مضبوط امےدوار چوہدری اظہر قےوم ناہرا ہےں اور ےونی فےکشن بلاک مےں موجود ہ اےم پی اےز پی پی101چوہدری خالد پروےزورک اور پی پی102مےں چوہدری عرفان بشےر گوجرمسلم لےگ (ن) کے مضبوط امےدوار ہےں دونوں گروپ اپنے پورے پےنل کےلئے مسلم لےگ(ن) کے ٹکٹ کے خواہاں ہےں کوئی بھی امےدوار اپنا گرو پ چھوڑنا نہےں چاہتا دےکھئے اونٹ کس کروٹ بےٹھتا ہے تےسرا گروپ پاکستان پیپلزپا رٹی کا ہے جس کے قائد موجود ہ اےم اےن اے چوہدری تصدق مسعود خاں ہےں جو ضمنی الیکشن2010ءجےت کر ان کاگروپ مضبوط پوزےشن حاصل کر چکا ہے ان کے پےنل مےں حلقہ پی پی 102مےں چوہدری تنوےر اعظم چیمہ ہےں مگر حلقہ پی پی101ابھی تک خالی ہے حلقہ کے اکلوتے شہر نوشہرہ ورکاں کاسب سے بڑا مسئلہ نکاسی آب ہے گلےاں اور سڑکےں تو پختہ ہوئےں مگرگندے پانی کے نکاس کا مسئلہ بد سے بدترہوتا گےا جوکہ شہر ےوں کےلئے وبال جان بناہوا ہے نوجوا ن نسل کی جسمانی نشوونما کےلئے پورے شہر مےں ایک بھی گراﺅنڈ کانہ ہونا منتخب نمائندوں کے کڑاامتحان ہے جو الےکشن مےں اُن کےلئے درد سر بن سکتا ہے علاقے کا سب سے بڑا اور اہم مسئلہ پسماندگی ہے جس کی وجہ تعلےم ،صحت اور ذرآمد رفت کی سہولےات کا مےسر نہ ہوناہے ۔

مزید : الیکشن ۲۰۱۳