صدر کے دوعہدوں کیخلاف درخواست پر 18مارچ کو فیصلے کاامکان

صدر کے دوعہدوں کیخلاف درخواست پر 18مارچ کو فیصلے کاامکان
صدر کے دوعہدوں کیخلاف درخواست پر 18مارچ کو فیصلے کاامکان

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) ہائیکورٹ نے صدر زرداری کے دوعہدوں سے متعلق توہین عدالت کیس کے قابل سماعت ہونے کا فیصلہ 18مارچ کو سنانے کا عندیہ دیدیاہے اور ریمارکس میں کہاکہ آٹھ ماہ گزر گئے ، کیس مزید التواءمیں نہیں رکھ سکتے ۔ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ عمرعطابندیال کی سربراہی میں چاررکنی بنچ نے صدر کے دوعہدوں کیخلاف کیس کی سماعت کی ۔دوران سماعت وفاق کے وکیل وسیم سجاد عدالت میں پیش نہ ہوئے اور کیس کے التواءکی تحریری درخواست ایڈیشنل اٹارنی جنرل کی جانب سے پیش کی گئی۔ دوران سماعت درخواست گزار کے وکلا نے فاضل بنچ کو بتایاکہ صدر زرداری عدالتی حکم کے باوجود سیاسی سر گرمیاں جاری رکھے ہوئے ہیں اور اس حوالے سے اخباری تراشے بھی عدالت میں پیش کیے گئے۔چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ نے ریمارکس دئیے کہ گزشتہ 8 ماہ سے صدر کیخلاف توہین عدالت کی کارروائی کےلیے درخواست زیر سماعت ہے ،اسے مزید التوا میں نہیں رکھ سکتے، آئندہ پیشی پر اٹار نی جنرل اور وسیم سجاد سمیت درخواست گزار کے وکلا درخواست کے قابل سماعت ہونے پر حتمی دلائل دیں جس کے بعد عدالت اس کیس کا فیصلہ کرے گی اور مزید سماعت18مارچ تک ملتوی کردی۔

مزید : لاہور