وہ عجیب و غریب اشیاء جو ہوائی جہاز کی طر ح اڑتی ہیں

وہ عجیب و غریب اشیاء جو ہوائی جہاز کی طر ح اڑتی ہیں
وہ عجیب و غریب اشیاء جو ہوائی جہاز کی طر ح اڑتی ہیں

  

برمنگھم (نیوز ڈیسک) ہوا بازی کی تاریخ میں ہمیشہ دلکش نظر آنے والے سمارٹ جہاز ہی ایجاد نہیں کئے گئے بلکہ بعض منچلوں نے کچھ عجیب و غریب مشینوں کو جہازوں کی طرح اڑا کر حیرت کے نئے باب رقم کر دیئے۔ چند ایسی ہی اڑن مشینوں کا احوال درج ذیل ہے۔

مصافحہ کرتے ہوئے ہم صرف ہاتھ ہی نہیں ملاتے ، سائنسدانوں نے ہماری عادات سے متعلق اہم انکشاف کر دیا

1۔ میکڈونل XF-85 گوبلن

دوسری جنگ عظیم کے دوران ایجاد کئے گئے اس طیارے میں ایک پائلٹ بیٹھتا تھا اور اسے B-23 جیسے بمبار طیارے سے فضا میں چھوڑا جاتا تھا۔

2۔LLRV

لیونر لینڈنگ ریسرچ وہیکل 1220 میٹر کی بلندی تک اڑ سکتا تھا اور عمودی پرواز کی صلاحیت رکھتا تھا۔

3۔ VZ-9 ایورو کار

اس اڑن طشتری کو سرد جنگ کے آغاز میں امریکی فوج نے تیار کیا۔

4۔ لاک ہیڈXFV

اسے 1954 میں شمالی امریکہ میں فوجی قافلوں کے تحفظ کیلئے بنایا گیا۔

5۔ بارٹینی بیریوVVA-14

اسے ستر کی دہائی میں روس میں بنایا گیا۔ یہ پانی اور زمین سے پرواز کر سکتا تھا اور اس کا مقصد امریکی نیوزی کی پولارس میزائل آبدوزوں کو تباہ کرنا تھا۔

صرف خوبصورت لوگو ں کے لیے قائم ویب سائٹ نے تین ہزار صارفین کو بے دخل کر دیا،وجہ انتہائی دلچسپ

6۔ قلوپطرہ C-450

یہ مکڑے جیسی اڑن مشین فرانس میں تیار کی گئی اور یہ بھی عمودی پرواز کے قابل تھی مگر غیر متوازن اور خطرناک ہونے کی وجہ سے اس کی پیداوار بند کر دی گئی۔

7۔ واٹ V-173

امریکی نیوزی کیلئے 1942ءمیں بنائے گئے اس طیارے کو ”اڑنے والا کیک“ کہا جاتا تھا اور اسے ایک اڑنے والے پر کی شکل میں بنایا گیا تھا۔

8۔ کاپرونی CA-60 نووی پلانو

یہ اڑنے والی کشتی اٹلی میں تیار کی گئی جس کے 9 پر تھے اور اس میں 100 افراد کے بیٹھنے کی گنجائش تھی۔ اسے 8 انجن اڑا کر 54 فٹ کی بلندی تک لے گئے مگر ابتدائی ماڈل ہی حادثے کا شکار ہو کر تباہ ہو گیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -