آنکھ کا بدلہ آنکھ ، خاتون کے ساتھ درندگی کرنے والے کو ایران میں سزا

آنکھ کا بدلہ آنکھ ، خاتون کے ساتھ درندگی کرنے والے کو ایران میں سزا
آنکھ کا بدلہ آنکھ ، خاتون کے ساتھ درندگی کرنے والے کو ایران میں سزا

  

تہران (نیوز ڈیسک) ایران میں قصاص کے قانون کے مطابق عمل کرتے ہوئے حکام نے ایک شخص کے چہرے پر تیزاب پھینکنے والے مجرم کو بطور سزا ایک آنکھ اور کان سے محروم کردیا ہے۔

برطانوی اخبار ”دی مرر“ کے مطابق سخت سزا پانے والے مجرم کا نام حامد ہے اور اس پر الزام تھا کہ اس نے 2009ءمیں قُم شہر میں داﺅد روشانے نامی شخص کے چہرے پر تیزاب پھینکا تھا جس کے نتیجے میں اس کی ایک آنکھ ضائع ہوگئی تھی جبکہ چہرہ بری طرح جھلس گیا تھا۔

کن مردوں کے ہاں بیٹے کی پیدائش کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں؟تحقیق میں مشکل ترین سوال کا جواب مل گیا

ایرانی اخبار ”ہمشہری“ کے مطابق حامد کے جرم کی سزا کے طور پر 3 مارچ کو اس کی ایک آنکھ نکال دی گئی جبکہ دوسری آنکھ نکالنے کی سزا فی الحال ملتوی کردی گئی ہے اور اطلاعات کے مطابق دوسری آنکھ اگلے ماہ نکالی جاسکتی ہے۔ انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیموں کی طرف سے اس سزا کو حد درجہ ظالمانہ قرار دیا گیا ہے لیکن دوسری جانب ایرانی حکام کی طرف سے اسے قصاص کے قانون کے عین مطابق مجرم کے ظالمانہ فعل کا نتیجہ قرار دیا گیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -