اب خود مختار الیکشن کمیشن کیلئے جنگ لڑیں گے ،چیئرمین پی ٹی آئی،عمران خان کو ملکی نظم ونسق کا علم نہیں ،پرویز رشید

اب خود مختار الیکشن کمیشن کیلئے جنگ لڑیں گے ،چیئرمین پی ٹی آئی،عمران خان کو ...

  

 اسلام آباد(آئی این پی) تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ تحریک انصاف نے سینٹ کے انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کو بے نقاب کیا‘ ہمارے صوبائی ارکان اسمبلی نے کروڑوں کی آفرز ٹھکرا کر اپنے پارٹی امیدواروں کو ووٹ دیا‘ آزاد عدلیہ کے بعد اب آزاد اور خودمختار الیکشن کمیشن کیلئے جنگ لڑیں گے۔ وہ ہفتہ کو یہاں مقامی ہوٹل میں تحریک انصاف گلگت بلتستان کے کنونشن سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہاکہ کے پی کے میں بلدیاتی انتخابات کیلئے جون کی تاریخ دی ہے۔ بلدیاتی نظام کے ذریعے اختیارات نچلی سطح پر منتقل کردیں گے۔ انہوں نے کہاکہ وزیراعلی شریف آدمی ہیں اگر میں خود وزیراعلی ہوتا تو وفاق کو مشکل میں ڈال دیتا۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی وزیر برائے امور کشمیر برجیس طاہر کو دھاندلی کرانے کیلئے جی بی کا گورنر بنایا گیا ہے۔ نگران حکومت بھی غیر جانبدار نہیں ہے۔ نواز شریف نے زندگی میں کبھی کوئی میچ نیوٹرل امپائر کھڑے کرکے نہیں کھیلا جبکہ میں نے کرکٹ میں نیوٹرل امپائر متعارف کروائے۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح ہم نے آزاد عدلیہ کو بحال کرانے کیلئے جدوجہد کی اسی طرح اب آزاد و خودمختار الیکشن کمیشن کیلئے بھی جنگ لڑیں گے۔انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے آئندہ انتخابات جیت کر ان خطوں کیلئے نیا نظام لائیں گے۔ دونوں خطوں کی حکومتوں اور عوام کو بااختیار بنائیں گے۔ کشمیر اور جی بی کے فیصلے مظفرآباد اور گلگت میں ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ سینٹ کے الیکشن میں ہمارے لوگوں کو خریدنے کی کوشش کی گئی لیکن تحریک انصاف کے ایم پی ایز مبارکباد کے مستحق ہیں کہ وہ اپنی پارٹی اور قیادت کیساتھ وفادار رہے۔ ہمارے 80 فیصد ایم پی ایز نے زندگی میں ایک کروڑ روپیہ نہیں دیکھا ہوگا لیکن انہوں نے چار چار کروڑ کی آفرز ٹھکرائیں۔

اسلام آباد(آئی این پی) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ عمران خان کی سیاسی فہم و فراست نہ ہونے کے برابرہے‘ گلگت بلتستان کا لیڈر آف دی ہاؤس پیپلزپارٹی کا ہے‘ خان صاحب کی باتوں سے احساس ہوتا ہے کہ انہیں ملکی نظم و نسق اور نظام کا علم نہیں۔ عمران خان کے خطاب پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ اگر بنی گالا میں بیٹھ کر پورا خیبرپختونخوا چلایا جاسکتا ہے تو میانوالی چلانا بھی کوئی مشکل نہیں۔ خان صاحب کی سیاسی فہم و فراست نہ ہونے کے برابر ہے کیونکہ انہیں ذرا بھی سمجھ بوجھ ہوتی تو انہیں معلوم ہونا چاہئے تھا کہ گلگت بلتستان اسمبلی کے لیڈر آف دی ہاؤس پیپلزپارٹی سے تعلق رکھتے ہیں اور قائد ایوان نے گلگت بلتستان کے وزیراعلی کا نام مشاورت سے تجویز کیا اسلئے عمران خان جب بھی بات کرتے ہیں تو احساس ہوتا ہے کہ انہیں ملکی نظم و نسق اور نظام کا کوئی علم نہیں ہے۔

مزید :

صفحہ اول -