دہشتگردی ،انتہاء پسندی اور فرقہ واریت کا خاتمہ قوم کی آواز ہے ،شہباز شریف

دہشتگردی ،انتہاء پسندی اور فرقہ واریت کا خاتمہ قوم کی آواز ہے ،شہباز شریف

  

 لاہور(پ ر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے یہاں آئی ایم ایف کے وفد نے ملاقات کی۔ ملاقات میں عوام کی فلاح و بہبود کیلئے وسائل بڑھانے کیلئے اقدامات اور ٹیکس نظام میں اصلاحات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عام آدمی کو ریلیف کی فراہمی اور اس کا معیار زندگی بلند کرنا حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے۔پنجاب حکومت ایک ایک پائی امانت سمجھ کر فلاح عامہ پر خرچ کر رہی ہے۔ پنجاب حکومت نے صوبے کے اربوں روپے کے وسائل بچا ئے ہیں اور بچائے گئے وسائل عام آدمی اور کم وسیلہ طبقات کے معیار زندگی بہتر بنانے پر صرف کئے جا رہے ہیں۔ انہو ں نے کہا کہ وسائل بڑھانے کیلئے ٹیکس نظام میں اصلاحات متعارف کرائی جا رہی ہیں تاکہ تعلیم، صحت اور دیگر سماجی شعبوں کی بہتری پر زیادہ سے زیادہ وسائل صرف کئے جا سکیں۔ وزیراعلیٰ نے صوبے کی ترقیاتی حکمت عملی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ صوبے کی تیز رفتار ترقی کیلئے ٹھوس حکمت عملی اپنائی گئی ہے۔روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ صوبے کی جی ڈی پی میں اضافے کیلئے اہداف مقرر کئے گئے ہیں جن کے حصول کیلئے تیز رفتاری سے آگے بڑھا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی 60 فیصد سے زائد آبادی نوجوانو ں پر مشتمل ہے۔ پنجاب حکومت نوجوانوں کو بااختیار بنانے کیلئے انقلابی اقدامات کر رہی ہے اور اگلے تین برس کے دوران 20 لاکھ نوجوانوں کو ہنرمند بنانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے اور اب تک پنجاب سکل ڈویلپمنٹ کمپنی کے ذریعے ہزاروں نوجوانوں کو باعزت روزگار فراہم کیا گیا ہے، سکل ڈویلپمنٹ پروگرام کا دائرہ کار مزید بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پنجاب حکومت میرٹ پر نوجوانوں کو 50 ہزار گاڑیاں دے رہی ہے جس کا مقصد انہیں باعزت روزگار فراہم کرنا ہے جبکہ کم آمدن والے خاندانوں کیلئے لوکاسٹ ہاؤسنگ سکیم کا اجراء کیا گیا ہے۔ توانائی بحران کا ذکر کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ توانائی کے مسئلے سے نمٹنے کیلئے سولر، کوئلے، ہائیڈل اور ایل این جی سے بجلی کے کارخانے لگائے جا رہے ہیں۔ پنجاب حکومت نے صوبے میں ایل این جی سے ایک ہزار میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ وفاقی حکومت ایل این جی سے3600 میگاواٹ کے منصوبے لگائے گی۔ پنجاب میں سٹیٹ آف دی آرٹ فرانزک لیب قائم کی گئی ہے۔ پنجاب حکومت تعلیم، صحت اور سماجی شعبوں کی تیز رفتار ترقی کے حوالے سے انقلابی اقدامات اٹھا رہی ہے جبکہ مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کے فروغ کے حوالے سے سرمایہ کاروں کو ترجیحی بنیادوں پر سہولتیں فراہم کر رہے ہیں۔ ٹیکسٹائل اور گارمنٹس انڈسٹری کے فروغ کیلئے جدید اپیرل پارک قائم کیا جا رہا ہے۔ اسی طرح پنجاب میں انفراسٹرکچر کی بہتری پر خصوصی دی گئی ہے اور ٹرانسپورٹ کے نظام کو جدید خطوط پر استوار کرنے کیلئے میٹرو بس منصوبے شروع کئے گئے ہیں۔ لاہور میں میٹرو بس پراجیکٹ سے روزانہ ڈیڑھ لاکھ سے زائد لوگ استفادہ کر رہے ہیں۔ اسلام آباد۔راولپنڈی میٹرو بس پراجیکٹ تکمیل کے آخری مراحل میں ہے۔ جنوبی پنجاب کے ضلع ملتان میں میٹرو بس منصوبے کا جلد سنگ بنیاد رکھا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نیا شہر بسانے اور خصوصی اکنامک زون کے قیام کی منصوبہ بندی کر رہی ہے، اس ضمن میں ابتدائی تیاریوں کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اخراجات اور وسائل میں توازن انتہائی ضروری ہے اور پنجاب حکومت اس ضمن میں جامع حکمت عملی پر عمل پیرا ہے۔ آئی ایم ایف کے وفد نے اس موقع پربات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت کے فلاح عامہ اور وسائل میں اضافے کیلئے اقدامات قابل تعریف ہیں۔ آئی ایم ایف کے وفد نے ڈائریکٹر مسعود احمد کی قیادت میں وزیراعلیٰ سے ملاقات کی۔ اس موقع پر آئی ایم ایف کے مشن چیف اور پاکستان کیلئے ریذیڈنٹ نمائندے بھی موجود تھے۔صوبائی وزیر خزانہ مجتبیٰ شجاع الرحمن، اراکین اسمبلی رانا ثناء اللہ، ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، مخدوم ہاشم جواں بخت، چیف سیکرٹری،سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات اور متعلقہ سیکرٹریز بھی اس موقع پرموجود تھے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے یہاں چین کے اعلیٰ سطح کے وفد نے ملاقات کی۔ ملاقات میں مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعلیٰ نے چینی وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور چین کے مابین بہترین دوستانہ تعلقات موجود ہیں۔ چین نے مشکل کی ہر گھڑی میں پاکستان کا بھرپور ساتھ دیا ہے۔ پاکستان کی تعمیر و ترقی میں چین کا بے پایاں تعاون لائق تحسین ہے۔ پاک چین دوستی ہمالیہ سے بلند ،شہد سے میٹھی،فولاد سے زیادہ مضبوط اور سمندر سے زیادہ گہری ہے۔چین نے پاکستان کے مختلف شعبوں کی ترقی میں تعاون فراہم کر کے دوستی کا حق ادا کیا ہے۔انہو ں نے کہا کہ پاکستان اورچین کے عوام کے دل ایک ساتھ دھڑکتے ہیں۔ پاکستان اورچین کے مابین دوستی کے رشتے سود مند معاشی تعلقات میں ڈھل رہے ہیں اورمختلف شعبوں میں تعاون میں نئے دریچے کھل رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سال2015ء کو پاک چائنہ اقتصادی تعاون کے آغاز کے طور پر منایا جا رہا ہے جس سے بلاشبہ پاکستان اورچین کی دوستی نئے دور میں داخل ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ چین نے محنت اور جدوجہد کے ذریعے ترقی کی منازل طے کی ہیں اورچین دنیا کی ایک بہت بڑی معاشی قوت بن چکاہے۔اقوام عالم کیلئے چین کی تیزرفتار ترقی ایک رول ماڈل کی حیثیت رکھتی ہے۔انہوں نے کہا کہ پاک چین دوستی مثالی ہے اوردونوں ممالک کے عوام ایک دوسرے کا دل سے احترام کرتے ہیں اورپاکستان اورچین کی دوستی مضبوط سے مضبوط تر ہورہی ہے ۔پاکستان اور چین کے درمیان دوستی کا لازوال رشتہ موجود ہے اور دونوں ممالک کے مابین تمام شعبوں میں تعاون کے نئے دور کا آغاز ہوچکا ہے۔ وزیراعلیٰ نے بتایا کہ پنجاب حکومت نے قائداعظم سولر پارک میں پاکستان کا سب سے بڑا اور پہلا سومیگاواٹ کا سولر منصوبہ انتہائی تیز رفتاری سے مکمل کیا ہے اور یہ سولر منصوبہ بہت جلد بجلی کی پیداوار شروع کر دے گا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ چین کی متعدد کمپنیاں پاکستان خصوصاً پنجاب میں سرمایہ کاری کر رہی ہیں اور دونوں ملکوں کے مابین تعلقات نئی بلندیوں کو چھو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چین کے ساتھ مختلف شعبوں میں تعاون کو مزید فروغ دینے کے خواہاں ہیں۔ صوبائی وزراء شیر علی خان، تنویر اسلم ملک، چین میں پاکستانی سفارتخانے کی کمرشل قونصلر ، ایم پی اے ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، وفاقی سیکرٹری پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات اور دیگر اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان کی 50فیصد سے زائد آبادی خواتین پر مشتمل ہے۔ خواتین کی ترقی اورانہیں بااختیار بنائے بغیر پاکستان کی ترقی اورخوشحالی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہوسکتا ۔ملک کی تعمیرو ترقی میں خواتین کا کردار انتہائی اہمیت کا حامل ہے ۔پاکستان کی خواتین با صلاحیت،محنتی اورتعلیم یافتہ ہیں،خواتین نے مختلف شعبوں میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا ہے ۔ کوئی بھی معاشرہ خواتین کو ان کے حقوق دیئے بغیر ترقی کی منزلیں طے نہیں کر سکتا۔ دین اسلام نے خواتین کے حقوق پر بہت زیادہ زور دیا ہے۔پنجاب حکومت نے خواتین کے حقوق کے تحفظ اور انہیں مساوی ترقی کے مواقع فراہم کرنے کیلئے انقلابی اقدامات کئے ہیں۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے عالمی یوم خواتین کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ معاشرے کی ترقی کیلئے خواتین کو آگے بڑھنے کے یکساں مواقع فراہم کرنا ہوں گے۔ملک و قوم کی ترقی کیلئے خواتین کو عملی میدان میں اپنی صلاحیتوں کا بھر پور مظاہر ہ کرنا ہے ۔ملک کی تعمیر وترقی کے ساتھ پرامن معاشرے کی تشکیل میں بھی خواتین کے مؤثر کردار کی اہمیت سے انکار نہیں کیا جاسکتا۔دین اسلام نے خواتین کو باوقار مقام عطاکیا ہے ۔پنجاب حکومت نے خواتین کی ترقی اوران کے حقوق کے تحفظ کیلئے تاریخی اقدامات اٹھائے ہیں۔سرکاری ملازمتوں میں خواتین کا کوٹہ5فیصد سے بڑھا کر15فیصد کردیا گیا ہے ۔ حکومت کے اس انقلابی فیصلے سے زیادہ سے زیادہ خواتین کو مختلف شعبوں کی ترقی میں اپنا بھر کردارادا کرنے کا موقع ملے گا،اسی طرح ضروری قانون سازی کے ذریعے خواتین کا وراثت میں حصہ یقینی بنایا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ایک اورانقلابی فیصلے کے تحت خواتین کو ملازمت کیلئے عمر کی حد میں 3سال کی خصوصی رعایت بھی دی جارہی ہے۔پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت کے انقلاب آفرین اقدامات کے باعث پہلی مرتبہ خواتین کی بڑی تعداد لیپ ٹاپ سکیم ، اجالا پروگرام، انٹرن شپ پروگرام اور خود روزگار سکیم سے مستفید ہو رہی ہے۔ خواتین کو بااختیار بنانے کے حوالے سے حکومتی اقدامات کے حوصلہ افزا اور مثبت نتائج برآمد ہو رہے ہیں۔ یہ بات خوش آئند ہے کہ پاکستانی خواتین وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ملک کی تعمیر و ترقی میں پہلے سے بڑھ کر کردار ادا کر رہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ آج کا عالمی یوم خواتین ہم سے تقاضا کرتا ہے کہ خواتین کو ترقی کے دھارے میں شامل کرنے کیلئے ہر ضروری قدم اٹھایا جائے اورملک کی نصف سے زائد آبادی کے حقوق کا تحفظ یقینی بنایا جائے ۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے اہل پنجاب خصوصاً لاہور کے شہریوں کو ہارس اینڈ کیٹل شوکے کامیاب انعقاد پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہارس اینڈ کیٹل شو میں عوا م کی غیر معمولی دلچسپی اورشمولیت لائق تحسین ہے۔ہارس اینڈ کیٹل شوکے ذریعے پاکستان کی ثقافت کے دلفریب رنگوں کو بہترین انداز میں اجاگر کیا گیا ہے۔ وہ آج یہاں اعلی سطح کے اجلاس کی صدارت کررہے تھے جس میں صوبائی وزراء،کمشنر لاہورڈویژن،متعلقہ سیکرٹریز اورانتظامی افسران نے شرکت کی۔وزیراعلیٰ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ہارس اینڈ کیٹل شو کی انتظامیہ کومیلے کے بہترین انداز میں انعقاد پرشاباش دی اور کہا کہ عوام کو تفریحی مواقع فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے ،جسے حکومت ہر طرح کے حالات میں پورا کرے گی۔انہوں نے کہا کہ ہارس اینڈ کیٹل شوقومی یکجہتی اوربھائی چارے کو فروغ دینے میں معاون ثابت ہوگا ۔ہارس اینڈ کیٹل شو کے ذریعے عوام کو تفریح فراہم کرنے کیساتھ پاکستان کی ثقافت سے روشناس کرایا گیاہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے صرف میلہ مویشیاں کی تجدید نہیں کی بلکہ پنجاب بھر میں کھیلوں کے میدان بھی آباد کیے ہیں۔یہ میلہ پنجاب بلکہ پاکستان کی ثقافت کا عکاس ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری ثقافت بنیادی طورپرزرعی ثقافت ہے جس میں دیہی زندگی ، لائیوسٹاک،زراعت کو خصوصی اہمیت حاصل ہے اوریہ ہارس اینڈ کیٹل شواسی ثقافت کی عکاسی کرتا ہے۔

شہباز شریف

لاہور(پ ر)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کی زیر صدارت یہاں اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں تعلیمی نصاب میں برداشت ، رواداری ، بھائی چارے کے فروغ ، دہشت گردی ،انتہاء پسندی او رفرقہ واریت کے خاتمے کے حوالے سے خصوصی مضامین شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیااور پنجاب بھر میں دہشت گردی ،انتہاء پسندی او رفرقہ واریت کے خاتمے کے حوالے سے مضمون نویسی اور تقریری مقابلے کرانے کے اقدام کی باقاعدہ منظوری دی گئی ۔اجلاس میں صوبے میں امن وامان کی صورتحال او رنیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کے حوالے سے کئے جانیوالے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ دہشت گردی کے خلاف نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کے حوالے سے فوری اورموثر اقدامات اٹھائے گئے ہیں۔دہشت گردی اورفرقہ واریت کا خاتمہ پوری قوم کی آواز ہے۔دہشت گردی، ا نتہا پسندی اور فرقہ واریت کے خلاف ہر محاذ پر جنگ لڑی جائے گی ۔انہوں نے کہاکہ تحصیل، ضلع،ڈویژن اور صوبائی سطح پر تعلیمی اداروں کے طلبا و طالبات کے درمیان مضمون نویسی اور تقریری مقابلے کرائے جائیں گے ۔مضمون نویسی او رتقریری مقابلہ جات میں تحصیل سے صوبائی سطح تک اول ، دوم او رسوم آنے والے طلبا وطالبات میں نقد انعامات تقسیم کئے جائیں گے۔ تعلیمی نصاب میں شامل کئے جانے والے اضافی مضامین کے حوالے سے امتحانات میں سوالات بھی شامل کئے جائیں گے۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ پنجاب میں نیشنل ایکشن پلان پر موثر انداز میں عملدرآمد جاری رکھا جائے ۔صوبائی وزراء مجتبیٰ شجاع الرحمن، رانا مشہودا حمد، عطامانیکا، وحید آرائیں ، ایم این اے حمزہ شہبازشریف ، اراکین اسمبلی رانا ثناء اﷲ، زعیم حسین قادری، چیف سیکرٹری ، معاون خصوصی رانا مقبول احمد، انسپکٹرجنرل پولیس، سیکرٹری داخلہ اور اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کی زیر صدارت یہاں اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں کریمنل جسٹس ایجوکیشن اینڈ ریسرچ ڈویلپمنٹ انسٹیٹیوٹ کے قیام کے مجوزہ منصوبے کے حوالے سے قائم کردہ کمیٹی کی سفارشات کا جائز ہ لیا گیا۔اجلاس میں مجوزہ منصوبے کے قیام کے حوالے سے مختلف تجاویز پر غور کیا گیا۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ عوام کو فوری انصاف کی فراہمی کے لئے مجوزہ منصوبے کی افادیت مسلمہ ہے۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ کے تناظر میں کریمنل جسٹس ایجوکیشن اینڈ ریسرچ ڈویلپمنٹ انسٹیٹیوٹ کے قیام کا منصوبہ انتہائی اہمیت رکھتا ہے۔ وزیراعلیٰ نے مجوزہ منصوبے کو عملی شکل دینے کے حوالے سے حتمی سفارشات طلب کرتے ہوئے کہاکہ شعیب سڈل اور ان کے رفقائے کاراس ضمن میں جلد حتمی قابل عمل تجاویز پیش کریں گے ۔صوبائی وزراء مجتبیٰ شجاع الرحمن، رانا مشہود احمدخان،عطا مانیکاء ، وحید آرائیں ،ایم این اے حمزہ شہبازشریف ، اراکین اسمبلی رانا ثناء اﷲ،زعیم حسین قادری، چیف سیکرٹری، معاون خصوصی رانا مقبول احمد ،انسپکٹر جنرل پولیس، متعلقہ سیکرٹریز اور اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی ۔

مزید :

صفحہ اول -