دہشت گردی کے فتنے کو کچلنے کا حل فوجی آپریشن ہی تھا ،ڈاکٹر حسن محی الدین

دہشت گردی کے فتنے کو کچلنے کا حل فوجی آپریشن ہی تھا ،ڈاکٹر حسن محی الدین

  

 لاہور (نمائندہ خصوصی ) چیئرمین تحریک منہاج القرآن ڈاکٹر حسن محی الدین القادری نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے فتنے کو کچلنے کا حل فوجی آپریشن ہی تھا ۔ ہم اپنے شہداء اور زخمیوں کی کفالت خود کریں گے ،شہداء کے خون کا سودا نہیں کرینگے سانحہ ماڈل ٹاؤن میں ملوث عناصر سے حساب لینگے۔ شہداء کا خون قاتلوں کے گلے کا پھندہ بنے گا۔حکومتی امداد کو جوتے کی نوک پر رکھتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستان عوامی تحریک کے زیر اہتمام ڈاکٹر طاہر القادری کے 64 ویں یوم پیدائش کے موقع پرسیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سیمینارمیں پیر غلام حیدر ضیائی ، چیئرمین سنی اتحاد کونسل صاحبزادہ حامد رضا،خرم نواز گنڈا پور، مجلس وحدت المسلمین کے رہنما ناصر عباس شیرازی، رہنما پی ٹی آئی ولید اقبال، مسیحی رہنما فادر جیمز جنن و دیگر نے خصوصی شرکت کی۔صاحبزادہ حامد رضا نے کہا کہ ایمپلی فائر ایکٹ کے قانون کی آڑ میں علماء کے خلاف کارروائیاں کی جارہی ہیں۔خرم نواز گنڈا پور نے کہا ہے کہ طاہر القادری کا ویثرن امت مسلمہ کو وقار و عزت دے گا۔ ناصر عباس شیرازی نے کہا کہ طاہر القادری امن کے سفیر ہیں۔ ڈاکٹر طاہر القادری نے ہمیشہ دہشت گردی کے خلاف سب سے پہلے آواز اٹھائی ۔حکمرانوں کو ماڈل ٹاؤن کے شہداء کے خون کا قصاص دینا ہو گا۔ناصر شیرازی نے کہا خاص منصوبہ کے تحت قومی ایکشن پلان کو ناکام بنایا جارہا ہے۔ ولید اقبال نے کہا کہ ڈاکٹر طاہر القادری انتہا پسندی اور دہشت گردی کے خلاف معتبر ترین حوالہ ہیں مسیحی رہنماء ڈاکٹر جیمز چنن نے کہا کہ مختلف مذاہب کے درمیان مشترکہ اقدار پر اکٹھا ہونا ہی دنیا کو امن دے سکتا ہے ۔ ڈاکٹر حسن محی الدینچ

مزید :

صفحہ آخر -