موبائل فون کو چوری سے بچانے ، بند کرانے کا طریقہ

موبائل فون کو چوری سے بچانے ، بند کرانے کا طریقہ
موبائل فون کو چوری سے بچانے ، بند کرانے کا طریقہ

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) ملک میں سٹریٹ کرائم کی وجہ سے آپ یا آپ کا کوئی عزیز ،دوست کبھی نہ کبھی موبائل فون سے محروم ہوچکاہوگا اورآئے روز سمارٹ فون اور موبائلوں کی چوریوں اور فراڈ کے عجیب وغریب طریقے سامنے آ رہے ہیں اور موبائل چوری یا ڈکیتی کی وارداتوں کی روک تھام کے لیے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی(پی ٹی اے ) نے آئی ایم ای آئی (International Mobile Equipment Identity)نمبر کے ذریعے چوری شدہ فون بلاک کرنے کا طریقہ وضع کیا۔

کمپنی ہر سمارٹ فون اور موبائل کو یہ مخصوص نمبر الاٹ کرتی ہے لہٰذا نیا فون خریدتے ہی یہ نمبر کسی کاغذ پر لکھ کر محفوظ کر لیںکیونکہ اس کے چوری ہونے پر آئی ایم ای آئی کی ضرورت پڑے گی یا اپنے فون پر #06#  یا #0000#*ڈائل کر کے اس کا یہ نمبر حاصل کر سکتے ہیں،خدانخواستہ کسی بھی واردات کا نشانہ بن جائیں تو سب سے پولیس میں اس کی رپٹ درج کرانے کی سرتوڑ کوشش کریں ، شاید کامیاب ہوجائیں۔

رپٹ درج ہونے کے بعد پی ٹی اے کے ٹول فری نمبر 55055-0800پہ اپنے موبائل یا سمارٹ فون چوری کی اطلاع دیجیے۔ آپ پی ٹی سی کی ای میل پر بھی یہ اطلاع بھجوا سکتے ہیں۔ کراچی کے شہریوں کو سی پی ایل سی (Citizen Police Liaison Committee) کی سہولت بھی حاصل ہے۔ وہ اس ادارے سے بھی رابطہ کر کے موبائل چوری کی اطلاع دے سکتے ہیں۔

شکایات درج ہونے کے باوجود اگرآپ کاموبائل آپ کو نہ بھی ملے تو ان اقدامات سے یہ یقینی ہو گا کہ چور آپ کا موبائل یا سمارٹ فون آزادی سے استعمال یا فروخت نہیں کر سکتا۔ یہ عمل دقت طلب اور کچھ پیچیدہ ہے تاہم اس کا فائدہ ہوتا ہے۔ نیز بہ حیثیت ذمہ دار شہری ہمارا فرض ہے کہ ہر جرم کی رپورٹ درج کرائیںاور یوں جرائم کی روک تھام میں آسانی ہوتی ہے۔

مزید براں جب بھی آپ نیا خصوصاً سیکنڈ ہینڈ موبائل یا سمارٹ فون خریدئیے تو پی ٹی اے کی ویب سائٹ پہ دستیاب آئی ایم ای آئی سرچ میں اس کا نمبر ڈال کے تصدیق کر لیجیے کہ وہ چوری شدہ تو نہیں۔

مزید :

سائنس اور ٹیکنالوجی -