اداروں میں سیاسی مداخلت اور پولیس کلچر ختم کریں گے،خیبر پختونخواہ تحفظ خواتین بل تیار کر لیا : عمران خان

اداروں میں سیاسی مداخلت اور پولیس کلچر ختم کریں گے،خیبر پختونخواہ تحفظ ...
 اداروں میں سیاسی مداخلت اور پولیس کلچر ختم کریں گے،خیبر پختونخواہ تحفظ خواتین بل تیار کر لیا : عمران خان

  


پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہاہے کہ ان کی پارٹی اقتدار میں آ کر قومی اداروں میں سیاسی مداخلت اور پولیس کلچر کا خاتمہ کرے گی۔صوبائی حکومت نے خیبر پختونخواہ تحفظ خواتین بل تیار کر لیا گیا ، خواتین کو جائیداد میں حصہ ملنا چاہئے۔ 

پشاور کی بینظیر وویمن یونیورسٹی میں یوم خواتین کے حوالے سے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نوجوانوں سے وعدہ کرتا ہوں کہ تعلیم کو اولین ترجیح پر رکھوں گا، جس طرح سے کے پی کے حکومت کام کر رہی ہے پارٹی کو 2018 کے انتخابات میں انتخابی مہم چلانے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

عمران خان کا کہنا تھا کہ ظلم کے خلاف آواز اٹھانا اور حق کا ساتھ دینا سیاست کا لب لباب ہے،جو اپنے خوف پر قابو نہیں پاتا وہ کبھی بڑا لیڈر نہیں بن سکتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ کے پی کے حکومت نے بلدیات کے فنڈز کو 2 ارب سے بڑھا کر 44 ارب کردیا ہے اور حکومت میں آکر قومی اداروں میں سیاسی مداخلت اور پولیس کلچر کا خاتمہ کریںگے۔ نبی کریم ﷺ نے سیاسی اقتدار کو ذاتی مفاد کے لیے کبھی استعمال نہیں کیا، ساری دنیا تسلیم کرتی ہے کہ رسول اکرم ﷺسب سے عظیم رہنما تھے،فتح مکہ کے وقت نبی کریم نے مخالفین کیلئے عام معافی کا اعلان کیاتھا، بکھرے ہوئے قبیلوں کو متحد کیا اور آپ کی ذات ہمارے لیے مشعل راہ ہے ۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں۔

ہمارے معاشرے کی طاقت ہمارا خاندانی نظام ہے خواتین کی تعلیم خیبر پختونخواحکومت کی ترجیح ہے ، خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ شریعت نے خواتین کو جو حق دیا وہ ہم نہیں دے سکتے خواتین کو تعلیم دینا اور انہیں بااختیار بنانا ہوگا ملک کے اکثر علاقوں میں خواتین کو جائیداد میں حصہ نہیں ملتا دیگر جماعتوں نے خواتین کی تعلیم پر کیوں توجہ نہیں دی؟۔ ہماری حکومت خواتین کو حقوق اور تعلیم دے گی ۔

مزید : قومی /اہم خبریں