ہاؤسنگ سکیم کے نام پر کروڑوں کے فراڈمیں ملوث لینڈ سپلائر ڈویلپرز گرفتار

ہاؤسنگ سکیم کے نام پر کروڑوں کے فراڈمیں ملوث لینڈ سپلائر ڈویلپرز گرفتار

ملتان ( نمائندہ خصوصی ) نیب ملتان نے کبیروالا میں گلشن مہر علی ہاؤسنگ سکیم کے نام پر کروڑوں روپے کے فراڈ میں ملوث لینڈ سپلاٹیر اور پراپرٹی ڈویلپرز کو گرفتار کرلیا ملزمان نصیر احمد تبسم، ناصر احمد خان ، رانا قاسم اور میاں افتخار کو آج ریمانڈ کے لئے احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا نیب ترجمان (بقیہ نمبر22صفحہ7پر )

کے مطابق ملزمان نے تحصیل کبیروالا ناصر گارڈن ہاؤسنگ سکیم کے نام سے کالونی متعارف کرائی کالونی بنانے سے قبل ملزمان نے متعلقہ ادارے سے این او سی حاصل نہ کیا بلکہ پلاٹوں کی خریدوفروخت شروع کردی ملزمان نے 2006میں کالونی کے نام تبدیل کر گلشن مہر علی ہاؤسنگ فیز تھری کے نام رکھ اور شہریوں کو پلاٹوں کی خریدوفروخت شروع کردی مختصر عرصہ میں ملزمان نے الاٹیزسے 10کروڑ روپے نکلوائے اور کالونی کو ادھورا چھوڑ کر چلتے بنے جس پر 20پہلے مرحلے میں 20سے زائد متاثرین اور دوسرے مرحلے میں 99متاثرین سے نیب ملتان بیورو کو درخواست دی انکوائری کے دوران ملزمان صفائی پیش کرنے میں ناکام ہوگئے جس پر لینڈ سپلائر نصیرا حمد ، ناصر خان ، رانا قاسم اور کالونی ڈویلپرز میاں افتخار کو گزشتہ روز نیب آفس سے ہی گرفتار کرلیا 4ملزمان کو ریمانڈ کے لئے آج احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا ۔

لینڈ سپلائر گرفتار

مزید : ملتان صفحہ آخر