اورنج لائن کا ٹھیکیدار کروڑوں کا چونا لگانے کے بعد پشاور میٹرو کا ٹھیکہ لینے پہنچ گیا

اورنج لائن کا ٹھیکیدار کروڑوں کا چونا لگانے کے بعد پشاور میٹرو کا ٹھیکہ لینے ...

لاہور(عامر بٹ سے )اورنج لائن منصوبے کا ٹھیکیدار پنجاب حکومت کو کروڑوں روپے کا چونا لگانے کے بعد پشاور میٹرو بس منصوبے کا ٹھیکہ لینے پہنچ گیا۔ خیبر پختونخوا حکومت نے مقبول کالسن کمپنی کے مالک کو محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب کے کئی خطوط کے باوجود پشاور میں پناہ دے رکھی ہے۔ تفصیلات لاہور سے سرفراز احمد کی اس رپورٹ میں اورنج لائن منصوبے کے ایک سیکشن کی ٹھیکیدار کمپنی مقبول کالسن نے پنجاب حکومت کو کروڑوں کا چونا لگایا، محکمہ اینٹی کرپشن نے مقبول کالسن کے خلاف تحقیقات شروع کر رکھی ہیں لیکن ملزم ہاتھ نہیں آ رہا۔ محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب کے مطابق ملزم عامر لطیف نے اورنج لائن منصوبے کے ایک سیکشن کا ٹھیکہ لیا۔لیکن حکومت کے مقرر کردہ معیار کے مطابق ستون تیار نہ کئے۔ستونوں کی موٹائی اور میٹریل میں گڑبڑ کرکے عامر لطیف نے نہ صرف کروڑوں کی کرپشن کی بلکہ منصوبے کے معیار کو بھی متاثر کیا۔ذرائع کے مطابق اورنج لائن منصوبے میں گھپلوں کے بعد ملزم عامر لطیف نے پشاور میٹرو بس منصوبے کا بھی کچھ حصہ ٹھیکے پر لینے کی تیاری شروع کر دی ہے اور خیبر پختونخوا کے وزیراعلیٰ پرویز خٹک سے ملاقاتوں میں ٹھیکے کی ابتدائی بات چیت طے کی جا چکی ہے۔محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب نے ملزم عامر لطیف کو کئی بار تحقیقات کے لیے طلب کیا لیکن ملزم روپوش ہو گیا۔ اینٹی کرپشن نے عامر لطیف کی پشاور موجودگی کی اطلاع پر کے پی حکومت کو خط لکھے کہ مقبول کالسن کمپنی اورنج لائن منصوبے میں گھپلوں میں مطلوب ہے۔ پشاور میٹرو کا ٹھیکہ دینے کی بجائے اسے محکمے کے حوالے کیا جائے۔کے پی کے حکومت نے اینٹی کرپشن کو کسی خط کا جواب نہیں دیا۔ذرائع کا دعویٰ ہے کہ پشاور میٹرو منصوبے میں ملزم عامر لطیف کو ٹھیکہ دیا جا چکا ہے۔ کاغذی کارروائی باقی ہے۔ اینٹی کرپشن کی طرف سے خطوط اور انتباہ کے باوجود پشاور میٹرو میں عامر لطیف کو ٹھیکہ دینا کے پی کے حکومت کی ساکھ پر بھی بڑا سوالیہ نشان ہے۔

مزید : صفحہ آخر