ایم کیو ایم کا نئی حلقہ بندیوں کی رپورٹ پر سخت اعتراض

ایم کیو ایم کا نئی حلقہ بندیوں کی رپورٹ پر سخت اعتراض

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہار الحسن نے نئی حلقہ بندیوں کی رپورٹ پر سخت اعتراضات کیے ہیں اور اس کے خلاف قرار داد مذمت لانے کا اعلان کیا ہے ۔ بدھ کو سندھ اسمبلی میں خواجہ اظہار الحسن نے کہا کہ یہ رپورٹ انتہائی متنازع ہے ۔رپورٹ میں کراچی کے بیشتر حلقوں کو دیہی حلقے قرار دیا گیا ہے ۔ صوبے کے سب سے گنجان آباد ضلع وسطی کراچی کی نشستیں کم کر دی گئیں ۔ یہ شہر کے مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالنے کی منصوبہ بندی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مردم شماری میں پہلے ہی کراچی کی آبادی کم دکھائی گئی ہے ۔ حلقہ بندیوں کی نئی رپورٹ کے خلاف قرار داد مذمت لائیں گے ۔ اس پر سینئر وزیر نثار احمد کھوڑو نے کہا کہ 19 سال بعد مردم شماری ہوئی ہے ۔ اس مردم شماری پر پورے سندھ کو تحفظات ہیں ۔ اگر کے ایم سی کے علاقوں کو دیہی قرار دیا گیا ہے تو اس معاملے کو دیکھنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں کہیں قومی اسمبلی کا حلقہ 6 لاکھ آبادی کا ہے اور کہیں 11 لاکھ آبادی کا ہے ۔ حلقہ بندیوں کی رپورٹ پر ہمیں بھی تحفظات ہیں ۔

مزید : کراچی صفحہ اول