مظفرآباد،ملزمان کی گرفتاری نہ ہونے پر ایم ڈبلیو ایم کا احتجاجی مظاہرہ

مظفرآباد،ملزمان کی گرفتاری نہ ہونے پر ایم ڈبلیو ایم کا احتجاجی مظاہرہ

مظفرآباد(ڈسٹرکٹ رپورٹر)علامہ تصور جوادی پر قاتلانہ حملہ ہوئے ایک سال گزرنے کے باوجود حملہ آوروں کی عدم گرفتاری ۔سراغ تک نہ لگانا ،عوام کو معلومات سے دور رکھنے پر مجلس وحدت مسلمین ،انسداد دہشتگردی پبلک ایکشن کمیٹی کا سنٹرل پریس کلب مظفرآباد کے باہر احتجاجی مظاہرہ ۔مشتعل مظاہرین نے سڑک بلاک کر کے حملہ آوروں کو گرفتار کرو ۔دہشتگردی ختم کرو۔خفیہ ہاتھ سامنے لاؤ ۔نااہل انتظامیہ نااہل حکومت ہائے ہائے کے نعرے لگا رہے تھے ۔احتجاجی مظاہرہ سے مجلس وحدت مسلمین آزادکشمیر کے سربراہ علامہ سید تصور حسین نقوی الجوادی کو آرڈی نیٹر پبلک ایکشن کمیٹی سید شجاعت علی کاظمی ،مولانا سید طالب ہمدانی ،سید تصور عباس موسوی ،مولانا سید ضیاء الحسن زیدی ،سید یاسر علی نقوی ،سید فخر عباس کاظمی ،سید حمید نقوی ،سید ذیشان حیدر ،سید راشد علی نقوی ،مولانا طاہر الحسن ،مولانا معصوم سبزواری ،سید عاطف ہمدانی ،مشتاق کاظمی ،غفران علی کاظمی ،اسد بخاری ،ماجد اعوان ،علی رضا بخاری ،مبارک علی کوثری ،و دیگر نے خطاب کیا ۔مقررین نے اپنے خطاب میں کہا کہ اب ہمارے صبر کا پیمانہ لبریز ہو چکا ہے ۔بہتر صبر کیا اب مطالبہ ہے کہ علام تصور جوادی پر حملہ کرنے والوں کو جلد ازجلد گرفتار کیا جائے اور انہیں قرار واقعی سزا دی جائے ۔انہیں ان کے سہولت کاروں کو سامنے لایا جائے ۔حکومت و انتظامیہ کے پاس اب بھی وقت ہے ہوش کے ناخن لے ۔اس مسئلے کو سنجیدہ لے ۔اس سارے مسئلے میں حکومت نام کی کوئی چیز نظر نہیںآرہی ۔سب کو سنجیدگی دکھانا ہوگی ۔ورنہ آنے والے شدید ردعمل کو کوئی نہیں روک سکتا۔بیس دن کا وقت دیتے ہیں اگر پھر بھی ہمارے مطالبات پر کان نہ دھرے گئے تو دما دم مست قلندر ہوگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر