’اس شعبے میں تو غیر ملکی بہت زیادہ ہیں‘ اب سعودی حکومت نے کس شعبے سے غیر ملکیوں کو نکالنے کی تیاری مکمل کرلی؟ جان کر پاکستانی شدید پریشان ہوجائیں گے

’اس شعبے میں تو غیر ملکی بہت زیادہ ہیں‘ اب سعودی حکومت نے کس شعبے سے غیر ...
’اس شعبے میں تو غیر ملکی بہت زیادہ ہیں‘ اب سعودی حکومت نے کس شعبے سے غیر ملکیوں کو نکالنے کی تیاری مکمل کرلی؟ جان کر پاکستانی شدید پریشان ہوجائیں گے

  


جدہ (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں بہت سے شعبے ایسے ہیں جن سے غیر ملکیوں کو مکمل طور پر نکال دیا گیا ہے اور باقی رہ جانے والے شعبوں میں یہ سلسلہ جاری ہے۔ اسے محض اتفاق ہی کہا جا سکتا ہے کہ اکاﺅنٹنگ کے شعبے میں غیر ملکیوں کی بہت بڑی تعداد ہونے کے باوجود اب تک کسی کی توجہ اس شعبے کی جانب نہیں گئی تھی، مگر بالآخر اب اس شعبے کی باری بھی آ گئی ہے۔

سعودی اتھارٹی آف چارٹرڈ اکاﺅنٹنٹس (اے سی اے) کے سیکرٹری جنرل احمد المغمس کا کہنا ہے کہ مملکت میں کل 1لاکھ 67ہزار غیر ملکی اکاﺅنٹنٹ ہیں جبکہ اس کے برعکس اس شعبے میں سعودی شہریوں کی تعداد صرف 4800 ہے۔ جدہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی ایک تقریب میں منگل کے روز خطاب کرتے ہوئے انہوں نے انکشاف کیا کہ اس سلسلے میں وزارت محنت و سماجی ترقی سے رابطہ کیا گیا ہے تاکہ اس شعبے کو بھی سعودی شہریوں کے حوالے کرنے کے لئے اقدامات کئے جاسکیں۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

واضح رہے کہ اکاﺅنٹنگ کا شمار ان شعبوں میں ہوتا ہے جو غیر ملکیوں کے لئے بہت دلکش سمجھے جاتے ہیں اور سعودی عرب میں اس شعبے سے وابستہ غیر ملکیوں میں پاکستانیوں کی بھی بہت بڑی تعداد ہے۔ سعودی حکام کے بیانات سے ظاہر ہوتا ہے کہ بالآخر اس شعبے سے سب غیر ملکیوںکو نکال دیا جائے گا لیکن دریں اثناءاس بات کو بھی یقینی بنایا جائے گا کہ بیرون ملک سے اکاﺅنٹنٹس کی بھرتی کو محض ان افراد تک محدود کردیا جائے گا جن کا تجربہ کم از کم تین سال ہو۔

مزید : عرب دنیا