مسلط وزیر اعظم کو اپنی ٹیم کے ہوتے کسی دشمن کی ضرورت نہیں ، سردار حسین بابک

مسلط وزیر اعظم کو اپنی ٹیم کے ہوتے کسی دشمن کی ضرورت نہیں ، سردار حسین بابک

پشاور (پ ر )عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی الیکشن کمیشن کے چیئرمین سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ مسلط وزیر اعظم کو باہر سے کسی دشمن کی ضرورت نہیں ان کی اپنی ٹیم ہی عبرتناک انجام تک پہنچانے کیلئے کافی ہے ، کپتان سب سے پہلے اپنی فوج ظفر موج کی تربیت کیلئے ادارہ قائم کریں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے بشام میں اے این پی شانگلہ کی ضلعی کابینہ کے انتخابی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر صوبائی الیکشن کمیشن ، ضلعی الیکشن کمیٹی ، منتخب کونسل ممبران اور مشران بھی موجود تھے،صوبائی و ضلعی الیکشن کمیشن کی زیر نگرانی کابینہ کے انتخاب کیلئے ووٹنگ کا عمل ہوا جس کے مطابق حاجی سدید الرحمان اے این پی شانگلہ کے صدر اور ذاکر اللہ جنرل سیکرٹری منتخب ہو گئے ، دیگر کابینہ ممبران میں سینئر نائب صدر محمد اعظم خان ،نائب صدر اول رشید احمد، نائب صدر دوم لطیف اللہ، ایڈیشنل جنرل سیکرٹری حضرت امین ،ڈپٹی جنرل سیکرٹری شاہ عالم خان ،جائنٹ سیکرٹری اسلام زادہ، سیکرٹری مالیات شاہ ولی خان ، سیکرٹری اطلاعات الطاف حسین اور سیکرٹری ثقافت جہان روخان شامل ہیں، سردار حسین بابک نے نو منتخب کابینہ کو مبارکباد پیش کی اور کہا کہ منتخب ممبران پارٹی کی فعالیت اور مضبوطی کیلئے اپنی تمام توانائیاں بروئے کار لائیں اور عوامی مسائل کے حل کیلئے خود کو ہمہ وقت تیار رکھیں ، انہوں نے کہا کہ اے این پی جمہوری جماعت ہے اور اس میں دیگر جماعتوں کی طرح نامزدگیوں کی بجائے نمائندوں کے چناؤ کا اختیار کارکنوں کے پاس ہے ، انہوں نے کہا کہ جمہوریت کی بالادستی اور جمہوری اقدار کے فروغ کیلئے اے این پی کا کردار مسلمہ ہے ، سردار حسین بابک نے کہا کہ گزشتہ الیکشن میں عمران خان نے نوجوانوں کو اپنے پاس تجربہکار ٹیم کے نام پر ورغلایا جس کا ثبوت آئے روز حکومتی وزراء کے سامنے آنے والے متنازعہ بیانات ہیں ، انہوں نے کہا کہ عمران خان کو ایسے وزراء کے ہوتے ہوئے کسی دشمن کی ضرورت نہیں،انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے ملک پر غیر ضروری طور پر تاریخ اور سیاست سے نا بلد لوگ مسلط کر دیئے گئے ہیں ، حکمرن عوامی مسائل حل کرنے کی بجائے ان میں اضافے کا سبب بن رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ مسلط وزیر اعظم کی فوج ظفر موج لوگوں میں اشتعال پیدا کرر ہی ہے،جس کا نقصان ملک کو ہو رہا ہے،انہوں نے کہا کہ مرکز اور خیبر پختونخوا میں عوامی مشکلات میں اضافہ ہو رہا ہے اور لوگ مہنگائی و بے روزگاری کی دلدل میں دھنس چکے ہیں،ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچانے والے عمران خان اپنے وزراء کیلئے اخلاقی تربیت گاہ قائم کریں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر