اوآئی سی ، اسلامی عسکری اتحاد کو پاکستان کا ساتھ دینا چاہیے: سید عقیل عباس حیدر

اوآئی سی ، اسلامی عسکری اتحاد کو پاکستان کا ساتھ دینا چاہیے: سید عقیل عباس ...

لا ہور ( انٹر ویو :شہزاد ملک: تصاویر: ندیم احمد ) جمیعت علما ء پاکستان نیا زی کے مر کزی سیکر ٹری اطلا عا ت سید عقیل عباس حیدر نے کہا ہے کہ اوآئی سی ، اسلامی عسکری اتحاد کو بھارت کے مقابلے میں پاکستان کا ساتھ دینا چاہیے ، اس تنظیم نے آج تک کسی مظلوم کا ساتھ نہیں دیا،سعودی عرب سمیت کسی ملک نے بیان نہیں دیا کہ پاکستان پر حملہ ان پر حملہ ہوگا،او آئی سی نے بھارت اور پاکستان کو ایک ہی پلڑے میں رکھا ، سازش کے تحت دباو میں لایا جارہا ہے، بھارت پاکستان کا ازلی دشمن ہے، حملے کے باعث پاکستانی قوم متحد ہو گئی، تحفظ پاکستان کیلئے قوم کا ہر فرد مرد مجاہد اور ہمہ وقت مر مٹنے کیلئے تیار ہے ، پاکستانی قوم اور سیاسی قیادت نے وطن کی سلامتی پر اتحاد کا مظاہرہ کرکے محب وطنی کا ثبوت دیا،نفرت کی بنیاد پر انتخابات جیتنے کے خواہشمند مودی نے بھارت کے لئے مشکلات پیدا کر دی ہیں ، بھارت ہوش کے ناخن لے پاکستان نے بھارتی آبدوز کو چھوڑ کر سرائز پر سپرائز دیا ہے،بھارت کے پاس اب غلطی کی گنجائش نہیں ہے غلطی کی صورت میں منہ توڑ جواب ملے گا ،آسمان ،زمین اور سمندرکے ساتھ زمین کے اندر بھی بھارت کو مات دینگے ،پاکستانی قوم کو اپنی مسلح افواج پر فخر ہے،پاک فضائیہ کاجوابی اقدام،بھارت کا غرور خاک میں مل گیا ہے،بھارت کو عالمی سطح پرذلت و رسوائی کے سوا کچھ نہیں ملا ،دراندازی کرنے والے بھارتی پائلٹ کی رہائی کا اعلان پاکستان کی اعلیٰ ظرفی ہے،بھارتی میڈیا کے رویے سے سخت مایوسی ہوئی، بھارتی میڈیا نے امن کی بجائے انسانیت کاخون بہانے پر زور لگایا اور جھوٹ کو پرموٹ کیا، ان خیا لا ت کا اظہار انہو ں نے روزنامہ ’’پاکستان ‘‘ کو انٹر ویو دیتے ہو ے کیا انہو ں نے کہاکہ او آئی سی اور 39 ممالک کے اسلامی عسکری اتحاد کو بھارت کے مقابلے میں پاکستان کا ساتھ دینا چاہیے مگر مسلمانوں کی اس نام نہاد تنظیم کی تاریخ گواہ ہے کہ اس نے آج تک کسی مظلوم کا ساتھ نہیں دیا۔ کشمیر، فلسطین ،روہنگیا ،بحرین اور یمن کے مسلمان ظالمانہ ریاستی جبر کا شکار چلے آرہے ہیں مگر کسی کے حق میں انہوں نے آواز بلند نہیں کی۔جبکہ دوسری طرف پاکستان کے وزراء اورتقریباً تمام مذہبی سیاسی جماعتیں بار بار یہی کہتی ہیں سعودی عرب پر حملہ پاکستان پر حملہ تصور کیا جائے گا۔مگر بھارت نے پاکستان پر حملہ کیا سعودی عرب سمیت او آئی سی کے کسی ملک نے دوستانہ بیان نہیں دیا کہ پاکستان پر حملہ ان پر حملہ ہوگا۔اور یہ کہ وہ واحد اسلامی ایٹمی طاقت کے ساتھ کھڑے ہیں۔ سعودی ولی عہد بن سلمان چند دن پہلے پاکستان کا دورہ کرکے گیا یہاں اس کا بھر پور استقبال کیا گیا ، وہ بعد میں انڈیا گیا تو اس وقت بھارتی فوجی جوانوں پر حملے کا پلوامہ واقعہ ہوچکا تھا اور دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی موجود تھی، مگرمودی کے ساتھ کھڑے ہو کر بن سلمان نے بھارت کا ساتھ دینے کا اعلان کیا ، پاکستان کے حق میں کوئی بات نہیں کی ۔او آئی سی ممالک نے بھارت اور پاکستان کو بھی ایک ہی پلڑے میں رکھا ہے یعنی جارح بھارت اور جارحیت کا شکار پاکستان دونوں ان کے نزدیک ایک ہیں ۔پاکستان پر فضائی حملے کے بعد سعودی وزیرخارجہ صرف پاکستان پر دباؤ ڈالتے رہے ہیں کہ وہ انڈیا کے خلاف جوابی حملہ نہ کرے۔او آئی سی کے اجلاس میں بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج کو دعوت دی گئی ، اس پر پاکستان کے احتجاج کو بھی خاطر میں نہیں لایا گیا۔ ہندوستان کی طرف سے حملے کے باعث پاکستانی قوم متحد ہو گئی ہے،تمام سیاسی و مذہبی جماعتیں بھارت کے خلاف یک جان ہیں۔ جبکہ پاک فوج کو 20کروڑ عوام کی مکمل حمایت حاصل ہے۔سید عقیل عباس نے کہاکہ تحفظ پاکستان کیلئے قوم کا ہر فرد مرد مجاہد اور ہمہ وقت مر مٹنے کیلئے تیار ہے۔پوری قوم ارض پاک کی حفاظت کے لیے اپنا من ،تن اوردھن سب کچھ قربان کرنے کو تیار ہے ۔ پاکستانی غیور عوام بھارت کی کسی قسم کی جارحیت کے خلاف افواج پاکستان کے شانہ بشانہ ہے جنہوں نے اپنی حب الوطنی اور پیشہ وارانہ صلاحیتوں کا لوہا منواتے ہوئے نہ صرف دشمن کو بھاگنے پر مجبور کیا بلکہ ان کے دو جنگی طیارے بھی مار گرائے بھارتی میڈیا کا پوری دنیا میں مذاق اڑرہا ہے مگر بھارتی میڈیا ہے کو کوئی شرم ہی نہیں جھوٹ پر جھوٹ اور جنگ پر اُکسانے پر معمور ہے ،بھارتی عوام پہچان چکی ہے۔

سید عقیل عباس حیدر

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر