غلط رُخ نماز کی ادائیگی ، پی ٹی آئی کی مذمتی قرارداد قومی اسمبلی میں جمع

غلط رُخ نماز کی ادائیگی ، پی ٹی آئی کی مذمتی قرارداد قومی اسمبلی میں جمع

اسلام آباد (آئی این پی) تحریک انصاف نے قومی اسمبلی کے ایوان میں اپوزیشن کی جانب سے نماز مغرب کی خانہ کعبہ کے دوسرے رخ ادائیگی پر مذمتی قرار داد قومی اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کروا دی۔قرار داد کے متن میں کہا گیا ہے کہ اپوزیشن ارکان نے نماز مغرب کعبہ رخ بتائے جانے کے باوجود دوسری طرف منہ کر کے نماز ادا کی، ارکان نے ایسا کر کے مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا ہے،یہ ایوان احکامات الٰہی اور سنت محمدیؐ پر عمل نہ کرنے کی مذمت کرتا ہے۔جمعرات کو پاکستان تحریک انصاف کے ارکان علی جدون اورمحمد ابراہیم خان نے قرار داد قومی اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمعہ کروائی۔قرار داد کے متن میں کہا گیا ہے کہ 6مارچ2019کو قومی اسمبلی کے جاری اجلاس میں پارلیمانی لیڈرجے یو آئی(ف) اسد محمود کی امامت میں نماز مغرب کعبہ رخ بتائے جانے کے باوجود دوسری طرف منہ کر کے نماز ادا کی، مزید یہ کہ وہ جگہ بھی نماز پڑھنے کیلئے نامناسب تھی کیونکہ پارلیمنٹ ہاؤس کی مسجد موجود ہے جہاں پر باجماعت نماز ادا کی جا رہی تھی، جن ممبران قومی اسمبلی نے اس طرح سے نماز ادا کی ہے انہوں نے مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا ہے،لہٰذا یہ ایوان احکامات الٰہی اور سنت محمدیؐ پر عمل نہ کرنے کی مذمت کرتا ہے۔ قرارداد کے ساتھ جماعت کئے جانے کی تصویر لف ہے۔

نماز؍ قرارداد

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر