عدالت کا ضلعی انتظامیہ کو عورت مارچ کی اجازت قانون کے مطابق دینے کا حکم

عدالت کا ضلعی انتظامیہ کو عورت مارچ کی اجازت قانون کے مطابق دینے کا حکم

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے عورت مارچ رکوانے کے لئے دائر درخواست کاتحریری فیصلہ جاری کر دیا۔چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس مامون رشید شیخ نے چار صفحات پر مشتمل تحریری فیصلہ جاری کیاہے۔ فیصلے میں کہا گیا ہے کہ ڈی سی لاہور آئین اور قانون میں دیئے گئے حقوق کی روشنی میں عورت مارچ کی اجازت کے لئے درخواست پر فیصلہ کریں۔ڈپٹی کمشنر عورت مارچ رکوانے کی درخواست کو بھی آئین اور قانون کے مطابق دیکھیں،درخواست گزار کا موقف تھا کہ عورت مارچ کے لئے گزشتہ سال ڈی سی لاہور سے اجازت حاصل کی گئی تھی۔ اس سال عورت مارچ کے منتظمین نے مارچ کے لئے تاحال ضلعی انتظامیہ سے اجازت نہیں لی،گزشتہ سال عورت مارچ کے دوران شرکاء نے غیر اسلامی اور بے بیہودہ تقاریر کیں، جس سے معاشرے میں عورت کا برا تاثر ابھرا اور گھریلو خواتین دل آزاری ہوئی،صرف چند خواتین کی خواہش کی خاطر معاشرے کا اسلامی تشخص مجروح نہیں کیا جاسکتا،استدعا ہے کہ عورت مارچ پر پابندی عائد کرنے کاحکم دیا جائے۔

عورت مارچ فیصلہ

مزید : صفحہ آخر