وزیر داخلہ اپنا ریکارڈ درست کریں،حافظ حسین احمد

وزیر داخلہ اپنا ریکارڈ درست کریں،حافظ حسین احمد

  



کوئٹہ(این این آئی) جمعیت علمائے اسلام کے مرکزی ترجمان اور سابق پارلیمنٹرین حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ وفاقی وزیر داخلہ برگیڈیئر اعجاز شاہ کا یہ کہنا کہ جے یو آئی کے آزادی مارچ کے حوالے سے حکومت نے مارچ کے خاتمے کے لیے کوئی وعدہ نہیں کیا تھا سے ظاہر ہوتا ہے کہ حکومت اور ادارے اب ایک پیج پر نہیں رہے ہیں۔ وزیر داخلہ برگیڈیئر اعجاز شاہ کے بیان پر تبصرہ کرتے ہوئے حافظ حسین احمد نے مزید کہا کہ ریٹائرڈ برگیڈیئر اعجاز شاہ جس ادارے میں رہے ہیں اور جس ادارے کی سفارش پرانہیں موجودہ حکومت میں لیا گیا ان کی اس حوالے سے بے خبری اور بے وفائی قابل حیرت ہے،انہوں نے کہا کہ اس وقت مارچ کے مہینے میں جو صورتحال ہے اگرچہ مسلم لیگ ن وعدے کے مطابق نومبر میں اپنے حالات کی وجہ سے نہیں نکلی سکی اور جنوری کا جو وعدہ پیپلز پارٹی نے کیا تھا وہ بھی پورا نہیں ہوسکا اب مارچ شروع ہے اور دونوں نے مارچ میں مارچ کی بات کی ہے لیکن ہم سمجھتے ہیں کہ اس وقت مارچ میں جو حالات بدل رہے ہیں ان تمام کے تمام کا سہرا آزادی مارچ کے سر جاتا ہے، انہوں نے کہا کہ ہم یہ سمجھتے ہیں کہ ماضی میں جس طرح تحریک انصاف نے اپنے دھرنے میں انگلی اٹھانے کی بات کی تھی اور 2018ء کے انتخابات میں جو کچھ ہوا تھا اس کے بعد یہ بات واضح ہوچکی ہے کہ جمعیت علمائے اسلام نے جو آزادی مارچ کیا تھااور جو یقین دہانی کرائی گئی تھی یقینا عوام کو جے یو آئی کا موقف سمجھ آچکا ہے، وزیر داخلہ برگیڈیئر اعجاز شاہ اپنا ریکارڈ درست کریں۔

حافظ حسین احمد

مزید : صفحہ آخر