واپڈاپیسکو ڈویژن درگئی کے زیراہتمام کھلی کچہری کاانعقاد

واپڈاپیسکو ڈویژن درگئی کے زیراہتمام کھلی کچہری کاانعقاد

  



سخاکوٹ(نمائندہ پاکستان) واپڈاپیسکو ڈویژن درگئی کے زیراہتمام کھلی کچہری کاانعقاد۔اے بی سی کیبل بچھانے، بجلی چورں کے خلاف آپریشن مزید تیزکرنے، سخاکوٹ کیلئے نئی منظور شدہ فیڈرپر کام کی رفتار تیز کرنے اور عوام کی بجلی کے حوالے سے مسائیل اور مشکلات کی بروقت حل کرنے کی ہدایت،ایس ای سوات سرکل خالد خان کاکھلی کچہری سے خطاب۔ تفصیلات کے مطابق واپڈا پیسکو ڈویژن درگئی کے زیراہتمام کھلی کچہری کاانعقاد کیاگیا جس میں ایس ای سوات سرکل کالد کان، ڈی سی ایم سوات سرکل عبدالودود خان، ایکسئن ڈویژن درگئی شیررحمان خان، ریونیو آفیسر درگئی نواب علی خان، ایس ڈی اوز فرمان اللہ خان، امیرمحمدخان، ہائیڈرو یونین ڈویژن درگئی کے چیئرمین جاوید خان، جنرل سیکرٹری طارق عظیم، وائس چیئرمین سرکل سوات نورزاد خان اور سپرنٹنڈنٹس سمیت دیگر اہلکاروں اور علا قہ عوام نے شرکت کی۔ اس موقع پر عوام نے بع ض جگہوں پر بجلی کے کمزور تاروں کی تبدیلی کا مطالبہ کیا جبکہ آئے روز پرمٹوں کے نام پر بجلی بندش کی شکایت کی۔ جس پر ایس ای سوات سرکل نے کھلی کچہری سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پچھلی دفعہ جومسائیل کھلی کچہری میں میں نے سنے تھے اس پر کام ہوگیاہے اب بجلی بندش کی جو شکایت ہے تو سخاکوٹ کے عوام کیلئے نئے فیڈر کی منظوری آچکی ہے کیوں کہ وہاں کے عوام کو بار بار بجلی ٹرفنگ،لوڈشیڈنگ اور کم وولٹیج کا مسئلہ تھا اب نئے فیڈر پر کام تیزی سے جاری ہے جس کیلئے پرمٹ لیناضروری ہوتاہے۔جن علاقوں میں تاریں کمزور ہیں ان کی تبدیلی کی کوشش کرینگے۔انہوں نے اس موقع پر پچھلے دنوں دوران ڈیوٹی کلہاڑی کے وار سے زخمی ہونے والے ایل ایس احسان سہیل کو سٹیج پر بلا کر گلے ملااور ان کی حوصلہ افزائی کی جبکہ ساتھ ہی اعلان کیا کہ ہم سب آپ کے ساتھ ہیں اور آپ کو جو بھی مدد درکار ہو ہم فراہم کریں گے۔انہوں نے اس واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور کہاکہ ہم بجلی چوروں کو کسی بھی حال میں نہیں چھوڑیں گے اور جہاں کہیں بھی بجلی چوری ہورہاہو ہم سخت ایکشن لیں گے جس میں ملاکنڈ انتظامیہ ہمارا ساتھ دینگے۔انہوں نے بجلی چوری کی روکتھام کیلئے اے بی سی کیبل بچھانے کابھی اعلان کیاساتھ ہی انہوں نے واپڈا ملازمین کی دادرسی کی کہ وہ انتہائی جانفشانی سے خدمات فراہم کررہے ہیں تاہم انہوں نے ہدایت کی کہ بجلی کے حوالے سے عوام کو درپیش مسائیل اور مشکلات کے حل میں اپنا بھرپورکردار اداکرے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر