صدر کینٹ کے تاجروں کا میرا جسم میری مرضی نعرہ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  صدر کینٹ کے تاجروں کا میرا جسم میری مرضی نعرہ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  



پشاور(سٹی رپورٹر)پشاور کینٹ کے تاجر تنظیموں نے میرا جسم میری مرضی نعرے کے خلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے کہا کہ ایسے نعرے لگانے والوں کا مقصد ملک میں فحاشی اور بے حیائی پھیلانی ہے جسکی جتنی بھی مزمت کی جائے کم ہے جبکہ حیاء دار عورت ہی حقیقی عورت ہوتی تاجروں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ائین پاکستان اور اسلامی قوانین کے تحت ایسے بے حیائی کے نعرے لگانے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے اور ملک میں اسلامی تعلیمات نافذ کیے جائے بصورت دیگر احتجاج کا دائرہ کار وسیع کرینگے مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اتھا رکھے تھے جس پر میرا جسم میری مرضی کے خلاف نعرے درج تھے اور میرا جسم اللہ کی مرضی کے فلک شگاف نعرے لگائے ۔مظاہرے کی قیادت صدر کینٹ کے مختلف تاجر تنظیموں کے صدور اور عہدیداران نے کی اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ ماروی سرمد جیسی عورتیں پاکستان مین فحاشی پھیلانا چاہتے اور ایسے نعرے لگانا خود عورت ذات کی توہین ہے۔انہوں نے کہا کہ میرا جسم میری مرضی کے نعرے لگانے والے اسلام اور پاکستان ک دشمن ہے اور بیرونی ایجنڈہ پر پاکستان میں عورت کے نام پر فساد برپا کرنا چاہتے ہے جبکہ دین اسلام میں عورت کا اعلیٰ مقام ہے اور ہمارے معاشرے مین بھی عورتوں کو بہت سے حقوق دیے گئے ہے۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ پاکستان میں میرا جسم میری مرضی کے نعرے لگانے والوں ک خلاف کارروائی کی جائے جو قانونی اور شرعئی تقاضہ بھی ہے اور پاکستان میں موجود بیرونی ایجنڈہ کے تحت فحاشی پھیلانے والوں سے سختی سے نمٹا جائے بصورت دیگر احتجاج کا دائر کاار وسیع کرینگے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر