بلاول بھٹو کی قیادت میں ہی جنوبی پنجاب صوبہ بنے گا، ارکان اسمبلی

  بلاول بھٹو کی قیادت میں ہی جنوبی پنجاب صوبہ بنے گا، ارکان اسمبلی

  



صادق آباد(نمائندہ خصوصی) پاکستان پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والے اراکین قومی وصوبائی اسمبلی مخدوم سید مرتضی محمود،مخدوم سید مصطفی محمود،مخدوم سید عثمان محمود،سردار رئیس نبیل احمد خان اور سردار ممتاز علی چانگ نے کہاکہ دو تہائی اکثریت اپوزیشن جماعتوں سے اتفاق رائے اور آئینی ترمیم کے بغیر جنوبی پنجاب صوبہ کا قیام ناممکن ہے صوبہ بنانے کیلئے حکومت کے(بقیہ نمبر33صفحہ12پر)

پاس دو تہائی اکثریت کا ہونا ضروری ہے جوکہ حکومت کے پاس نہیں چیئرمین بلاول بھٹو کی قیادت میں پیپلز پارٹی جنوبی پنجاب صوبہ بناکر ثابت کرے گی کہ وہ عوام کے جذبا ت واحساسات کی بھر پور ترجمانی کرنیوالی ملک گیر جماعت ہے حکومت اپوزیشن جماعتوں سے صوبہ کے قیام کے بارے حمایت لینے کی بجائے سیاسی انتقامی کاروائیاں کررہے ہیں تو اس صورت میں صوبہ کا قیام کسے ممکن ہوسکتا ہے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ سے کام نہیں چلے گا صوبہ محاذ والے اگر عوام کیساتھ مخلص ہوتے تو یقینا آج جنوبی پنجاب صوبہ بن چکا ہوتا حکمران صرف یو ٹرن لینے میں مصروف ہیں ملکی معاشی بحران سے دو چار پاکستان ترقی کے منازل طے کرنے کی بجائے معاشی عدم استحکام کا شکار ہورہاہے جس سے غربت جہالت مہنگائی بیروزگاری کی شرح میں اضافہ ہورہاہے مخدوم سید احمد محمود کی سیاسی بصیرت اور تدبیر کی بدولت پیپلز پارٹی آج جنوبی پنجاب میں نا قابل تسخیر قوت بن چکی ہے حکومت عوامی علاقائی مسائل حل کرنے میں بری طرح ناکام ہوچکی ہے پیپلز پارٹی ہی آئندہ حکومت بنا کر عوام کا معیار زندگی بہتر بنائیگی

ارکان اسمبلی

مزید : ملتان صفحہ آخر