’ووہان کے لوگوں کو شکرگزار ہونا سیکھائیے‘ کورونا وائرس سے سب سے بری طرح متاثر ہونے والے شہر کے سرکاری آفیسر کا اپنی حکومت سے مطالبہ

’ووہان کے لوگوں کو شکرگزار ہونا سیکھائیے‘ کورونا وائرس سے سب سے بری طرح ...
’ووہان کے لوگوں کو شکرگزار ہونا سیکھائیے‘ کورونا وائرس سے سب سے بری طرح متاثر ہونے والے شہر کے سرکاری آفیسر کا اپنی حکومت سے مطالبہ

  



بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس چین کے شہر ووہان سے پھیلا اور یہی شہر سب سے زیادہ اس موذی وباءسے متاثر ہوا۔ وائرس آنے کے بعد شہر کی فضاءہی یکسر بدل گئی، خوشیوں کی جگہ غم اور خوف و ہراس نے لے لی۔ اب ایک مقامی عہدیدار نے لوگوں ووہان کے لوگوں کے روئیے تبدیل کرنے اور انہیں اس افسردگی اور غم سے نکالنے کا ایسا طریقہ بتا دیا ہے کہ سن کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے۔ووہان میں کمیونسٹ پارٹی کے سیکرٹری وینگ ژونگ لین نے کہا ہے کہ ووہان کے لوگوں کو صبروشکر کی تعلیم دینے کی اشد ضرورت ہے تاکہ ان میں مثبت توانائی کا لیول بڑھ سکے اور ان کی زندگیوں سے وہ غم اور خوف نکل سکے جو کورونا وائرس کے باعث آیا ہے۔

وینگ ژونگ لین کا کہنا تھا کہ ”ووہان کے شہریوں کو مقامی حکومت کے ساتھ مل کر اس حوالے سے کام کرنا چاہیے اور ایسی تربیت لینی چاہیے جس میں انہیں شکر کرنا سکھایا جائے۔ “ واضح رہے کہ وینگ کی طرف سے یہ بیان ووہان کے شہریوں کی طرف سے ایسی ویڈیوز سامنے آنے کے بعد دیا ہے جن میں وہ چین کی نائب وزیراعظم سن چون لین کے اس بیان کو جھوٹ قرار دے رہے ہوتے ہیں جس میں نائب وزیراعظم نے کہا تھا کہ کورونا وائرس ختم ہو چکا ہے۔ ان شہریوں کا کہنا تھا کہ ”یہ لوگ اپنے گھروں کی کھڑکیوں سے دیکھ کر بتا رہے ہیں کہ صورتحال ٹھیک ہو چکی ہے۔“ شہریوں کے غصیلے ردعمل پر اب وینگ نے انہیں صبر و شکر کی تعلیم دینے کا بیان داغ دیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی